سعودی ارب پتی شہزادہ ولید بن طلال رہا

ویب ڈیسک – سعودی حکام کی جانب سے کرپشن کے الزام میں گرفتار امیر ترین عرب شہزادے ولید بن طلال کو رہا کر دیا گیا۔
اپنی رہائی سے چند گھنٹوں قبل انٹرویو دیتے ہوئے ولید بن طلال نے انکشاف کیا تھا کہ وہ پُر امید ہیں کہ انھیں رہا کر دیا جائے گا۔


انھوں نے کہا کہ ان پر کوئی الزام ثابت نہیں ہوا، ان کے اور حکومت کے درمیان معاملہ طے پا گیا ہے۔
سعودی کھرب پتی شہزادے نے کہا کہ سعودی حکام کے ساتھ مذاکرات میں وہ اس موقف پر قائم رہے کہ وہ بے گناہ ہیں۔


انہوں نے بتایا کہ وہ اپنے مالیاتی امور کو خود چلائیں گے اور اپنی دولت کا کوئی حصہ بھی حکومت کے حوالے نہیں کریں گے۔
یاد رہے کہ سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان نے کرپشن کے خلاف بڑے پیمانے پر کریک ڈاؤن کرتے ہوئے 10 سے زائد شہزادوں اور درجنوں سابق اور موجودہ وزراء کو گرفتار کر لیا تھا جن میں عرب کے امیر ترین شخص شہزادہ الولید بن طلال بھی شامل تھے۔

 

source