مصر: 2000سال پرانا فرعونی قبرستان دریافت

ویب ڈیسک – مصرمیں ایک قدیمی قبرستان سے فرعون کے دور کی باقیات برآمد ہوئی ہیں۔ماہرین کے مطابق یہ قبرستان کم و بیش 2000 سال پرانا ہے۔ اس قبرستان کی دریافت مصر کے تاریخی شہر قاہرہ کے جنوب میں واقع المینا سے ہوئی ہے۔ مصری خبررساں ادارے نے وزیر برائے عہد قدیم خالد العینی کے حوالے سے بتایا ہے کہ ماہرین آثار قدیمہ کو جنوبی شہر المینا میں ایک قدیمی قبرستان کی باقیات ملی ہیں۔

انھوں نے صحافیوں کو بتایا کہ وسیع وعریض رقبے پر پھیلے ہوئے اس قبرستان سے سونے کا ایک تاج، 40 تابوت اورایک ہزار کے قریب مجسموں کے علاوہ برتن، زیورات اور دیگر اہم سازوسامان کے حصے بھی ملے ہیں۔ حکام نے بتایا ہے کہ اس دریافت سے قدیمی مصری تہذیب کے بارے میں مزید معلومات حاصل ہوں گی۔ واضح رہے کہ یہ قدیمی قبرستان تونہ الجبل سے 4 کلومیٹر دور شمال میں واقع ہے۔ خالد العینی کا کہنا ہے کہ یہ دریافت صرف ایک شروعات ہے۔ ان کے خیال میں ہمیں اس قبرستان میں موجود اشیا کو نکالنے اور ان کے تجزیے کے لیے5 سال درکار ہوں گے

Source

(Photo: Ibrahim Youssef, EPA)