تشہیری مہم، چیف جسٹس نے حکومت سے عوامی پیسے کا حساب مانگ لیا

ویب ڈیسک: چیف جسٹس آف پاکستان میاں ثاقب نثار نے حکومت کی تشہیری مہم کے دوران خرچ ہونے والے ٹیکس کے پیسوں کا حساب مانگ لیا۔ جسٹس ثاقب نثار نے ایک عدالتی کاروائی کے دوران کہا ہے کہ حکومت کو عوام کے ٹیکس کے پیسوں کو اپنی تشہیری مہم کے لئے استعمال کرنے کا حساب دینا ہو گا۔

سپریم کورٹ لاہور میں الیکٹرونک اور پرنٹ میڈیا پر صوبائی حکومتوں کی تشہیری مہم کے خلاف ازخود نوٹس کی سماعت تین رکنی بینچ کی سرپرستی میں ہوئی۔ چیف جسٹس نے ٹی وی چینلز اور اخبارات میں حکومتی تشہیری مہم سے متعلق مکمل رپورٹ پیش نہ کرنے پر برہمی کا اظہارکیا اور استفسار کیا کہ کدھر ہے آپ کا وزیرِ اعلی اور چیف سیکرٹری؟

جس پر چیف سیکرٹری عدالت کے روبرو پیش ہوئے، اس دوران چیف جسٹس ان سے استفسار کیا کہ عوام کے ٹیکس کے پیسوں کو اپنی تشہیر کے لئے استعمال کرنے کی اجازت کس نے دی؟ آپ کو یہ بتانا ہوگا کہ کس کے کہنے پر کس کس چینل کو کتنے اشتہارات دیئے گئے۔

چیف جسٹس نے سیکرٹری اطلاعات کو حکم دیا کہ ابھی جائیں اور فائلیں کھولیں اور رپورٹ بنا کر لائیں، ایسا نہ ہو کہ آپ لوگ اب ہڑتال پر چلے جائیں، عوام کے ٹیکس کے پیسوں کا حساب دینا ہو گا۔

source

تبصرہ کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *