عراق میں داعش کا جلاد آپریشن کے دوران مارا گیا

ویب ڈیسک – عراق کے مغربی علاقے الانبار میں داعش کا ایک سرغنہ عراقی سیکورٹی اہلکاروں کی کارروائی میں ہلاک ہو گیا۔ عراق کے سیکورٹی ذرائع کا کہنا ہے کہ داعش کے اس سرغنہ کا نام ابو طاہا تیونسی ہے جو اپنے 9 دیگر دہشت گرد ساتھیوں کے ساتھ عراقی سیکورٹی اہلکاروں کی کارروائی میں ہلاک ہو گیا۔

دسمبر 2017 میں عراق میں داعش کے وجود کے خاتمے کے اعلان کے باوجود ملک کے بعض علاقوں، خاص طور پر دارالحکومت بغداد کے اطراف کے بعض علاقوں میں دہشت گردانہ حملے ہوتے رہتے ہیں۔ دریں اثناعراقی پارلیمنٹ میں ایزدی کردوں کے نمائندے فیان دخیل نے کہا ہے کہ ایزدی قبیلے کی اکتّیس سو عورتوں اور لڑکیوں کا، کہ جن کو داعش دہشت گرد گروہ نے اسیر کر لیا تھا، اب تک کوئی پتہ نہیں ہے اور انھیں تلاش کرنے کی کوشش بدستور جاری ہے۔

داعش دہشت گرد گروہ نے دو ہزار چودہ میں صوبے نینوا کے شہر سنجار پر قبضہ کرنے کے بعد، کہ جہاں بیشتر ایزدی لوگ آباد ہیں، پانچ ہزر سے زائد عورتوں اور لڑکیوں کو قیدی بنا نے کے بعد انھیں موصل اور شام کے بازاروں میں فروخت کر دیا تھا۔

source

تبصرہ کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *