خون کے آخری قطرے تک عوام کیلئے لڑوں گا، عمران خان

لاہور – پی ٹی آئی نے آج لاہور میں کامیاب جلسہ کیا، اپنی لیڈر کی کال پر تحریک انصاف کے کارکنان نے بھرپور طریقے سے جواب دیا اور مینار پاکستان اور گریٹر اقبال پارک کو چار چاند لگا دیئے۔

عمران خان نے آج کارکنان سے ایک طویل خطاب کیا، اپنا خطاب شروع کرنے سے پہلے عمران خان نے کہا کہ میں آج لمبی بات کرنے جا رہا ہوں جن کا سٹیمنا ہے وہ رہیں ورنہ آپ جا سکتے ہیں۔ لیکن کارکنان نے بھِی اپنے کپتان کا ساتھ دیا اور آخری وقت تک ان کے ساتھ میدان میں موجود رہے۔

عمران خان نے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ میں لاہور والوں کا شکریہ ادا کرتا ہوں، میں نے جب بھی انہیں پکارا انہوں نے میرا ساتھ دیا، میں وعدہ کرتا ہوں کہ خون کے آخری قطرے تک عوام کے لیے لڑتا رہوں گا۔

انہوں نے کہا کہ 1990 تک پاکستان اس خطے میں سب سے تیزی سے ترقی کررہا تھا، 60 سال کی تاریخ پر 6000 ارب روپے قرض تھا، 2008 سے 2013 تک 6000 سے 13 ہزار ارب ہوگیا، پانچ سالوں میں دوگنا ہوگیا۔

عمران خان نے کہاکہ یادرکھوجوملک مقروض ہوتاہےوہ کبھی آزادنہیں ہوسکتا۔ جوآپ کوقرضہ دیتاہےوہ آپ کوغلام بنالیتاہے۔

عمران خان نے کہا کہ میری والدہ کو جب کینسر ہوا تو پتہ چلا کہ پاکستان میں کینسر کے علاج کے لیے کوئی اسپتال نہیں۔اس وقت میں نے فیصلہ کیا کہ میں اس ملک میں اعلی معیار کا کینسر ہسپتال بنائوں گا۔

چئیرمین تحریک انصاف نے جلسے میں 11 نکات پیش کئے

1 بچوں کی تعلیم پر سب سے زیادہ زور لگاوں گا

2 صحت کی سہولیات پر خاص توجہ دوں گا

3 ایف بی آرکو ٹھیک کر کے اور ٹیکس ریفارمز کرکے ٹیکس اکٹھا کروں گا تاکہ بیرونی قرضوں پر انحصار کم ہو

4 کرپشن پر قابو پا کر دکھاوں

5  سرمایہ کاری، جلی و گیس کی فراہمی

6 ملک میں  سیاحت کو فروغ دیں گے جس سے خوشحالی آئے گی۔

7اپنا روزگار اور اپنا گھر*۔

7 ۔ سیاحت کو خاص فروغ دیں گے ہمارے ملک میں بہت سی خوبصورت جگہیں ہیں ، ان پر خاص توجہ دے کے ان کو ملکی و غیر ملکی سیاحوں کے لئیے کھولیں گے۔۔۔ یہ سب سے آسان طریقہ ہے پیسے کمانے کا جب سیاح یہاں آئیں گے تو پیسہ آئے گا، اس سے بھی روزگار کے مواقع پیدا ہوں گے

8 ۔ایگریکلچرل ایمرجینسی نافذ کروں گا سارا سال چھوٹا کسان محنت کرتا ہے جب سیزن کے بعد اسکی فصل ہوتی ہے تب اس کو اسکی قیمت نہیں ملتی شوگرمل مافیا سے کسانوں کے پیسے کی ریکوری میں کروں گا ماڈرن فارمنگ اورریسرچ سینٹرز بنائیں گے

9 وفاق کو مضبوط کریں گے۔ ( جنوبی پنجاب  کو صوبہ بنائیں گے اور  فاٹا کو خیبرپختونخوا کے اندد ضم کریں گے)۔

10 ماحولیاتی ایمرجنسیکا نفاذ (گرین پاکستان)

11: انصاف کی فراہمی۔

 

تبصرہ کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *