ٹیکساس فائرنگ سے جانبحق پاکستانی طالبہ سبیکا شیخ کی نماز جنازہ ادا

ہیوسٹن – امریکی ریاست ٹیکساس کے شہر ہوسٹن میں ہوئے فائرنگ کے واقعے میں ہلاک 18 سالہ پاکستانی طالبہ سبیکا شیخ کی نماز جنازہ ہیوسٹن میں ادا کر دی گئی۔ سبیکا کی نماز جنازہ ہیوسٹن کے مئیر سمیت پاکستانی کمیونٹی کی ایک بڑی تعداد نے شرکت کی۔

سبیکا کا جسد خاکی جس تابوت میں لایا گیا وہ اسے پاکستانی پرچم سے لپیٹا گیا تھا۔ نماز جنازہ کے بعد مقتولہ کے لئے دعائے مغفرت کی گئی۔ اس موقع پر ہر آنکھ پر نم نظر آئی۔

ادھر کراچی میں سبیکا کے گھر تعزیت کرنے والوں کا تانتا بندھا ہوا ہے، سبیکا والدین اپنی بیٹی کی ناگہانی موت پر نہایت دل گرفتہ نظر آرہے ہیں۔ سبیکا کی والدہ کا کہنا ہے سبیکا میری بیٹی ہی نہیں دوست بھی تھی۔

یاد رہے کہ گزشتہ ہفتے امریکی ریاست ٹیکساس کے شہر ہیوسٹن میں واقع سانٹا فی ہائی سکول میں ایک سفید فام لڑکے نے فائرنگ کر کے 17 افراد کو ہلاک جبکہ کئی کو زخمی کر دیا تھا۔ ہلاک ہونے والوں میں پاکستانی طالبہ سبیکا شیخ بھی شامل تھیں۔ سبیکا 9ستمر 2011 کے واقعہ کے بعد سٹوڈنٹ ایکسچینج پروگرام کے تحت امریکہ میں تعلیم حاصل کر رہی تھی۔

سبیکا شیخ کے والد عبدالعزیز نے اپنے گھر کے باہر میڈیا سے بات کرتے ہوئے بتایا کے سبیکا 2017 میں امریکہ تعلیم حاصل کرنے گئی اور 9 جون کو عید منانے وطن واپس آنا تھا۔ اس موقع پر وہ غم کی شدت سے نڈھال نظر آئے۔ سبیکا کے والد کا کہنا تھا کہ انہیں یقین ہی نہیں آرہا کہ ان کی بیٹی اب اس دنیا میں نہیں رہی۔

تبصرہ کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *