مراد علی شاہ دوسری اننگز کھیلنے کو تیار، ایک بار پھر وزیراعلی سندھ منتخب

کراچی – پاکستان پیپلزپارٹی کے مراد علی شاہ مسلسل دوسری بار وزیراعلیٰ سندھ منتخب ہوگئے۔  آج ہوئی ووٹنگ میں مراد علی شاہ نے 97 ووٹ حاصل کئے جبکہ اپوزیشن کے متفقہ امیدوار شہریار مہر 61 ووٹ لے سکے۔ مراد علی شاہ کل  کل اپنے عہدے کا حلف اٹھائیں گے۔

جیت کے بعد  مراد علی شاہ نے اسمبلی میں پہلا خطاب کرتے ہوئے کہا کہ چھوٹے صوبوں کے حقوق کا خیال نہیں رکھا گیا، لوگ بہت تبدیلی کی بات کرتے ہیں لیکن تاریخ بھول جاتے ہیں۔ 71 میں لوگوں کے حقوق کا خیال نہیں رکھا گیا اور آدھا ملک گنوا دیا، وہ دور یاد ہے جب لوگوں کی زبان بند کر دی جاتی تھی۔

مراد علی شاہ نے مزید کہا کہ جب بینظیر بھٹو ہم سے جدا کر دی گئیں تو بھی ملک بہت مشکل میں تھا، آصف زرداری نے پاکستان کھپے کا نعرہ لگا کر ملک کو آگے بڑھایا۔ نومنتخب وزیراعلیٰ سندھ کا کہنا تھا جب ہم نےحکومت نہیں بنائی تب بھی سب سے زیادہ ووٹ پیپلزپارٹی کو ہی ملے، سندھ کے عوام نے ہر بار پیپلزپارٹی کو ووٹ دیا، اس بار پیپلزپارٹی کے ووٹ میں 20 فیصد اضافہ ہوا۔

مراد علی شاہ کا تعلق سندھ کے شہر جامشورو سے ہے۔ ان کے والد عبداللہ شاہ بھی سابق وزیر اعلیٰ سندھ رہ چکے ہیں۔ وہ وزیرِ اعلیٰ نامزد ہونے سے قبل صوبائی وزیر خزانہ، وزیرِ توانائی اور وزیرِ آبپاشی بھی رہ چکے ہیں۔