قطری شہزادے کے خط سے کوئی تعلق نہیں، نوازشریف عدالت میں مکر گئے

اسلام آباد (ویب ڈیسک ) سابق وزیراعظم نوازشریف آج احتساب عدالت میں العزیزیہ مل ریفرنس کیس میں پیش ہوئے تو انہوں نے مشہور زمانہ قطری شہزادے ، شہزادہ جاسم کے خطوط سے کسی قسم کا تعلق ماننے سے انکار کر دیا اور اپنی واحد منی ٹریل کو خود ہی جھٹلا دیا۔

نواز شریف  نے موقف اختیار کیا کہ ان کے دونوں بیٹوں حسن اور حسین نواز کی جانب سے پیش کردہ دستاویزات بشمول قطری خطوط سے ان کا کوئی تعلق نہیں ہے۔

انہوں نے کہا کہ  دسمبر 2000ء میں جلا وطن کر کے جائیداد ضبط کر لی گئی۔جلا وطن ہونے کے بعد ہمارے پاس کاروبار شروع کرنے کیلئے پیسے نہیں تھے، میرے والد نے پیسوں کا انتظام کیا۔

ان کا کہنا تھا کہ  مارشل لاء کے بعد شریف خاندان کے کاروبار کا تمام ریکارڈ ایجنسیوں نے غیرقانونی تحویل میں لے لیا، ریکارڈ اٹھائے جانے کیخلاف متعلقہ تھانے میں شکایت درج کرائی گئی لیکن متعلقہ تھانے کی طرف سے ہماری شکایت پر کوئی ایکشن نہیں لیا گیا۔

سابق وزیراعظم نے کہا کہ جلاوطنی کے بعد واپسی پر نیب کے اقدامات کے خلاف عدالت سے رجوع کیا ، لاہور ہائیکورٹ نے نیب کے اقدامات کو کالعدم قرار دیا۔

تبصرہ کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *