ڈیم کیلئے موبائل کارڈ پر ٹیکس بحالی، چیف جسٹس نے عوام سے رائے مانگ لی

ویب ڈیسک – چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس ثاقب نثار نے ڈیمز کے لئے پیسا اکٹھا کرنے کی خاطرموبائل فون کے پری پیڈ کارڈز پر دوبارہ ٹیکس لگانے کی تجویز پیش کر دی ہے تاہم ساتھ ہی انہوں نے قوم سے اس حوالے سے رائے بھی طلب کرلی۔

تفصیلات کے مطابق جسٹس ثاقب نثار نے کہا ہے کہ اگر ضرورت پڑی تو موبائلپری پیڈ کارڈز پر دوبارہ ٹیکس لگایاجا سکتا ہے تا کہ  ڈیم کےلئے پیسے جمع کئے جا سکیں۔ لیکن اس کے لئے پہلے عوام سے رائے لی جائے گی۔

لندن میں یوکے پاکستان چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹریز کے زیر اہتمام فنڈ ریزنگ تقریب سے خطاب کے دوران چیف جسٹس ثاقب نثار کا کہنا تھا کہ ‘عوام پر ڈیم بنانے کےلئے ٹیکس لگانا مناسب نہیں ہوگا، لیکن ہم نے پری پیڈ موبائل کارڈ پر وِد ہولڈنگ ٹیکس ختم کرایا تھا اور جب حساب لگایا تو معلوم ہوا کہ اس سے ہر ماہ 3 ارب روپے کی بچت ہوئی۔ اگر قوم نے اجازت دی تو پری پیڈ کارڈ پر دوبارہ ٹیکس لگا کر ڈیم کےلئے پیسے جمع کریں گے، قوم میری اس تجویز پر رائے سے ضرور آگاہ کرے’۔

چیف جسٹس نے ایک بار پھر یقین دلایا کہ ڈیم فنڈ میں آنے والی ایک ایک پائی کی حفاظت کی جائے گی اور وہ قوم کی امانت محفوظ ہاتھوں میں دے کر جائیں گے اور اس حوالے سے ایک کمپنی ضرور بنائیں گے۔ان کا کہنا تھا، ‘یہ فنڈ قوم کی امانت ہے اور میں یہ امانت کسی ایمان دار شخص کے حوالے کرکے جاو¿ں گا جو اس کی حفاظت کرسکے’۔