بحریہ ٹاوٴن کا زوال شروع؟ ملازمین تنخواہوں کیلئے رُل گئے، پراپرٹی ڈیلروں کے ساتھ سڑکیں بلاک کر کے احتجاج
یہ خبر لائیک کریں

ویب ڈیسک – پاکستان کی سب سے بڑی ہاوٴسنگ سوسائٹی بحریہ ٹاوٴن اس وقت اپنے زوال کی جانب گامزن ہے۔ بحریہ ٹاوٴن کراچی کے ہزاروں ملازمین تنخواہوں کی عدم آدائیگی کے باعث سڑکوں پر سراپا احتجاج ہیں جبکہ ان کا ساتھ دینے کے لئے وہ پراپرٹی ڈیلرز اور سرمایہ کار بھی سڑکوں پر نکل آئے ہیں جنہوں نے اپنی زندگی بھر کی جمع پونجی بحریہ ٹاوٴن میں جھونک دی ہے۔

تفصیلات کے مطابق بحریہ ٹاؤن کے ملازمین اور سرمایہ کاروں نے احتجاج کرتے ہوئے سپرہائی وے کے دونوں ٹریک بند کر دیئے جس سے ٹریفک جام ہوگئی، گاڑیوں کی لمبی قطاریں لگ گئیں۔ سرمایہ کاروں کا کہنا ہے کہ ہم نے 5 سال تک قسطیں ادا کیں لیکن آج ہم نے جانتے کہ ہماری ادا کی گئی رقم کا کیا ہو گا۔

جبکہ احتجاج کرنے والے بحریہ ٹاوٴن کے ملازمین کا کہنا ہے کہ ملک کی سب سے بڑی کنسٹرکشن کمپنی میں کام کرنے والے  5 ہزارملازمین کو 6 ماہ سے تنخواہیں نہیں ادا ہوئی جس کے بعد ملازمین کے گھروں میں فاقوں کی نوبت آچکی ہے، بچوں کے اسکولوں کی فیسیں ادانہیں کرپارہے، بلاواسطہ اور بلواسطہ 20 ہزار سے زائد افراد متاثر ہورہے ہیں۔

ملک کی سب سے بڑی کنسٹرکشن کمپنی اور ہاوٴسنگ سوسائٹی اب ایک میگا سکینڈل میں بدلتی جا رہی ہے۔ ایک طرف حکومت کی جانب سے بحریہ ٹاوٴن کے ناجائز قبضوں کے خلاف آپریشن جاری ہے تو دوسری جانب بحریہ ٹاوٴن کی جانب سے اپنے ملازمین اور سرمایہ کاروں کا استحصال کیا جا رہا ہے۔

بحریہ ٹاوٴن کے متاثرین نے چیف جسٹس پاکستان جسٹس ثاقب نثار اور وزیراعظم عمران خان سے اپیل کی ہے کہ وہ اس معاملے کا نوٹس لیں اور متاثرین کی داد رسی کریں۔

یہ خبر لائیک کریں

تبصرہ کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *