کشمیر ہمارے ہاتھ سے نکل چکا ہے، بھارتی فوج کی پالیسی صرف کشمیریوں کا قتل ہے: سابق بھارتی وزیر خارجہ یشونت سنہا
یہ خبر لائیک کریں

ویب ڈیسک – بھارتی فوج نے آج تک کشمیر کی جدوجہد آزادی کو جتنا دبانے کی کوشش کی، کشمیریوں نے اس سے دگنی طاقت سے بھارت کا مقابلہ کیا۔ آج حالت یہ ہے کہ بھارت کے سابق وزیرخارجہ یشونت سنہا نے اس بات کا اعتراف کیا ہے کہ بھارت کشمیر کو کھو نہیں رہا بلکہ کھو چکا ہے۔

ایک انٹرویو میں بی جے پی کے رہنما اور سابق وزیرخارجہ یشونت سنہا نے کہا کہ بھارت کی فوج کشمیر میں صرف اپنی طاقت کے بل بوتے پر موجود ہے لیکن حقیقت میں ہم کشمیر کھو چکے ہیں۔ وادی ہمارے ہاتھ سے نکل چکی ہے۔

انہوں نے کہا کہ کشمیر طاقت کی پالیسی سے کشمیریوں کے دل میں بھارت کے لئے شدید نفرت پیدا ہو گئی ہے۔ بھارت نے کشمیریوں سے اپنے تعلقات کو تباہ کرلیا ہے، صرف اٹل بہاری واجپائی کشمیر میں فوج کی بجائے انسانیت کی پالیسی کو مانتے تھے۔

یشونت سنہا نے کہا کہ بھارتی فوج کشمیر میں انسانیت سوز پالیسی پر عمل پیرا ہے۔ بھارتی فوج کی پالیسی ہے کہ جتنے کشمیری مارے جا سکتے ہیں مار دیے جائیں۔ کشمیر میں جمہوریت اور انسانیت نام کی کوئی چیز نہیں۔

https://dailynewslounge.com/2018/10/22/9681/

یہ خبر لائیک کریں