لورالائی میں ڈی آئی جی کے دفتر پر حملہ میں 9 افراد شہید، 800 اہلکاروں کو بحفاظت نکال لیا: آئی ایس پی آر
یہ خبر لائیک کریں

ویب ڈیسک – لورالائی میں ڈی آئی جی پولیس کے دفتر پر دہشت گرد حملہ میں 8 پولیس اہلکاروں سمیت 9 افراد شہید اور 21  زخمی ہوئے ہیں  جس میں 4 پولیس اہلکاروں کی حالت تشویشناک ہے۔

فائرنگ ڈی آئی جی لورالائی کے دفتر کے احاطے میں اس وقت  ہوئی جب وہاں پولیس بھرتی کے لیے ٹیسٹ لیا جا رہا تھا۔

شہید ہونے والوں میں  جاوید اقبال، نعمت اللہ، غلام محمد ناصر، صادق علی، امیر زمان آفریدی، صلاح الدین، محمد نواز، خالق داد کدیزائی اور سلطان مسیح شامل ہیں جب کہ 21 افراد زخمی بھی ہوئے ہیں جن کی فہرست درج ذیل ہے۔

دوسری جانب  پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ( آئی ایس پی آر)  کے مطابق سیکیورٹی فورسز نے لورا لائی کمپلیکس کو کلیئر قرار دیتے ہوئے کمپاؤنڈ میں موجود 800 اہلکاروں کو بحفاظت نکال لیا ہے۔

آئی ایس پی آر نے کہا ہے کہ تین خود کش حملہ آوروں نے لورا لائی پولیس کمپاؤنڈ میں داخل ہونے کی کوشش کی تاہم موقع پر موجود پولیس نے ایک دہشت گرد کو گولی ماری تو حملہ آور نے خود کو دھماکے سے اڑا لیا۔

آئی ایس پی آر کے مطابق دو دہشتگرد اندھا دھند فائرنگ کرتے ہوئے ایک کمرے میں گھس گئے تاہم سیکیورٹی فورسز نے دونوں کو فائرنگ کر کے ہلاک کر دیا۔

یہ خبر لائیک کریں