ورلڈکپ 2023 کی میزبانی چاہیئے تو پاکستانیوں کیلئے یہ کام کرو، آئی سی سی نے بھارت کے سامنے بڑی شرط رکھ دی

ویب ڈیسک – جنگی جنون میں مبتلا بھارت پاکستان کو عالمی سطح پر تنہا کرنے کے خواب دیکھتے دیکھتے خود مشکل میں پھنستا جا رہا ہے۔ کھیل کے میدانوں میں سیاست لانا خود بھارت کو مہنگا پڑ گیا۔ 2023 کرکٹ ورلڈکپ کی میزبانی بھارت کو ملنے جا رہی ہے لیکن انٹرنیشنل کرکٹ کونسل نے اسے پاکستانی کھلاڑیوں کی شرکت  سے مشروط کر دیا بصورت دیگر بھارت کو کرکٹ ورلڈکپ کی میزبانی سے ہاتھ دھونا پڑ سکتے ہیں۔

تفصیلات کے مطابقپاکستان کے اعتراض پر آئی سی سی نے بھارت سے کہا ہے کہ وہ نومبر تک اپنی حکومت سے تحریری یقین دہانی حاصل کر کے آئی سی سی کو بتائے ورنہ میزبانی کسی اور ملک کو دینے پر غور کرسکتا ہے۔ بھارت نے 2021میں ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ اور 2023میں آئی سی سی ورلڈ کپ کی میزبانی کرنی ہے۔

پاکستان کرکٹ بورڈ نے انٹرنیشنل کرکٹ کونسل سے کہا ہے کہ اگر بھارت پاکستانی کھلاڑیوں اور آفیشلز کو ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ ویزوں کے اجرا کی پیشگی اور تحریری ضمانت نہ دے تو بھارت سے میگا ایونٹ کی میزبانی واپس لی جائے۔ پاکستان نے درخواست کی ہے کہ ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ اور ورلڈ کپ کے لیے پاکستانی کرکٹرز اور آفیشلز کو ویزوں کے اجرا کو یقینی بنایا جائے گا۔

یاد رہے کہ حال ہی میں بھارت نے پاکستان کی شوٹنگ اور اسنوکر ٹیم کو ویزے دینے سے انکار کیا تھا جس کی وجہ سے پاکستانی کھلاڑی دونوں انٹر نیشنل ایونٹس میں شریک نہیں ہو سکے تھے۔