پانامہ لیکس میں ملوث لاہور ہائیکورٹ کے جج جسٹس فرخ عرفان عہدے سے مستعفیٰ

ویب ڈیسک – پانامہ لیکس نے جہاں بڑے بڑے سیاستدانوں کے برج الٹے وہیں اب اس کے اثرات دوسری جگہوں پر بھی نظر آنے لگے ہیں۔ جس کی مثال لاہور ہائی کورٹ کے سنئیر جج جسٹس فرخ عرفان کی صورت میں نظر آئی۔ جوڈیشل انکوائری کا سامنا کرتے لاہور ہائیکورٹ کے جج جسٹس فرخ عرفان نے اپنا استعفیٰ صدر مملکت کو بھجوا دیا۔

تفصیلات کے مطابق جسٹس فرخ کا نام پاناما پیپرز تھا،ان کیخلاف سپریم جوڈیشل کونسل میں کیس زیرسماعت ہے۔ واضح رہے لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس فرخ عرفان خان سینئر جج ہیں، آپ نے 20فروری 2010ء میں بطور جسٹس لاہور ہائیکورٹ حلف اٹھایا تھا، تاہم جسٹس فرخ عرفان کی ریٹائرمنٹ کی مدت 22جون 2020ء کو مکمل ہونی تھی۔

میڈیا میں آنے والی خبروں کے مطابق جسٹس فرخ نے آف شور کمپنیوں کے الزام میں استعفیٰ دیا۔

یاد رہے کہ اس سے قبل سابق وزیراعظم نوازشریف کو بھی پانامہ لیکس میں نام آنے کی وجہ سے عہدے سے استعفیٰ دینا پڑا تھا۔