کوئٹہ ایک بار پھر خون میں رنگ گیا، بم دھماکے میں 16 افراد شہید، 30 زخمی

ویب ڈیسک – صوبہ بلوچستان کے دارالحکومت کوئٹہ ایک بار پھر دہشت گردی جی لپیٹ میں، ہزار گنجی کی پھل مارکیٹ میں بم دھماکے سے 16 افراد شہید ہو گئے جبکہ 30 شدید زخمی بھی ہوئے۔ کوئٹہ کے ہسپتالوں میں ایمرجنسی نافذ کر دی گئی۔ صدر، وزیراعظم اور آرمی چیف نے دھماکے کی شدید مذمت  کی ہے۔

تفصیلات کے مطابق ہزار گنجی کے قریب سبزی منڈی دہشت گردوں کی بزدلانہ کارروائی میں ایک بم دھماکہ ہوا ہے جس کے نتیجے میں 16 افراد جاں بحق اور 30 زخمی ہوگئے۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق دھماکہ سبزی منڈی میں ایک گاڑی کے قریب ہوا جس نے ہر طرف تباہی مچا دی۔ دھماکے سے سبزیاں اور فروٹ دور دور تک بکھر گئے اور قریبی دکانوں کو شدید نقصان پہنچا۔

دھماکے کے بعد  ریسکیو ٹیمیں موقع پر پہنچ گئیں، زخمیوں اور لاشوں کو ایمولینس کے ذریعے ہسپتال منتقل کیا۔ کئی زخمیوں کی حالت کی تشویشناک بتائی گئی ہے جس سے ہلاکتیں بڑھنے کا خدشہ ہے۔

سیکیورٹی فورسزنے علاقے کوگھیرے میں لے کر آپریشن کا آغازکردیا ہے۔ جائے وقوعہ پربم ڈسپوزل اسکواڈ کو بھی طلب کرلیا گیا ہے۔

دوسری جانب وزیراعلی بلوچستان جام کمال نے دہشت گردی کی بزدلانہ کارروائی میں قیمتی انسانی جانوں کے ضیاع پر دلی دکھ اور افسوس کا اظہار ک