فلم میں پاکستانی بننے سے انکار، مہوش حیات نے امیتابھ بچن کو کھری کھری سنا دیں

ویب ڈیسک – فنکار کسی بھی ملک کا سفیر ہوتا ہے اور وہ اگر چاہے تو اپنی خاص سفارتکاری سے دو ملکوں کے درمیان بہترین اور بدتر حالات کا ذمہ دار بن سکتا ہے۔ لیکن بھارتی سیاستدانوں کی طرح بھارتی فنکار بھی پاکستان دشمنی نے اتنا آگے بڑھ چکے ہیں کہ وہ کسی طور پاکستان کا نام تک سننا پسند نہیں کرتے۔

اس کی حالیہ مثال اس وقت دیکھنے میں آئی جب بالی وڈ کے لیجند اداکار بگ بی یعنی امیتابھ بچن نے ایک فلم میں پاکستانی شخص کا کردار ادا کرنے سے انکار کرتے ہوئے نا صرف پاکستان دشمنی کاثبوت دیا بلکہ وہ کتنے اچھے سفیر ثابت ہو سکتے ہیں یہ بھی بتا دیا۔  امیتابھ بچن کے اس اقدام پر کوئی اور تو آواز نہ اٹھا سکا تاہم حال ہی میں پاکستان کا سب سے بڑا سول ایوارڈ نشان امتیاز جیتنے والی اداکارہ مہوش حیات میدان میں آگئیں اور بگ بی کو کھری کھری سنا دیں۔

مہوش حیات نے مائیکرو بلاگنگ کی ویب سائٹ ٹویٹر پر اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ” حیات بھی شامل ہیں جنہوں نے امیتابھ کے فیصلے پرسخت تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ اگریہ خبر درست ہے تو امیتابھ کے اس اقدام سے سخت مایوسی ہوئی ہوں۔ فلموں میں ایک دوسرے کو آپس میں جوڑنے کی طاقت ہوتی ہے، جب کشیدگی عروج پر ہو تو فلمیں پُل کا کام کرتی ہیں۔ مجھے امید ہے کہ بالی ووڈ کے مستقبل کے بارے میں جذباتی گفتگوسے پہلے ہم احتیاط سے کام لے سکتے ہیں۔”

یاد رہے کہ  کہ بالی ووڈ کے آسکرایوارڈ یافتہ ساؤنڈ ڈیزائنرریسول پوکوٹی نے ہدایت کاری کے میدان میں ڈیبیو کرتے ہوئے پاک بھارت تعلقات پر فلم بنانے کا اعلان کیا تھا جس میں امیتابھ بچن کو پاکستانی شخص کا کردار ادا کرنے کی پیشکش کی گئی تھی ، ابتدا میں بگ بی اپنے کردار کو لے کر بہت پرجوش تھے لیکن پاک بھارت حالیہ کشیدگی کے بعد امیتابھ اپنے فیصلے سے پیچھے ہٹ گئے اورپاکستانی شخص کا کردار ادا کرنے سے انکار کر دیا۔