ہیروئین سمگلنگ: سعودی عرب میں میاں بیوی سمیت 3 پاکستانیوں کے سر قلم کر دیئے گئے

ویب ڈیسک – سرزمین حجاز سعودی عرب میں مزید تین پاکستانیوں کو منشیات سمگلنگ کے جرم میں موت کی سزا دے دی گئی۔ سزا پانے والوں میں دومیاں بیوی بھی شامل تھے جن کے سرسعودی قانون کے مطابق قلم کر دیئے گئے۔

سعودی وزارت داخلہ نے کہا محمد مصطفیٰ اور ان کی اہلیہ فاطمہ اعجاز کو ہیروئن اسمگلنگ کے دوران حراست میں لیا گیا تھا۔ تحقیقات کے دوران دونوں نے اقرار جرم کیا تھا جس کے بعد انہیں موت کی سزا سنائی گئی۔

تیسرے  پاکستانی شہری عبدالمالک ولد محمد خلیل کو جدہ ایئرپورٹ سے گرفتار کیا گیا تھا، جہاں سکیننگ کے دوران عبدالمالک کے پیٹ میں ہیروئن کی موجودگی کا انکشاف ہوا۔

چاروں افراد نے فیصلے کے خلاف اعلیٰ عدالتوں سے رجوع کیا تھا، تاہم اعلیٰ عدالتوں نے ابتدائی فیصلے کو برقرار رکھا۔

یاد رہے کہ سعودی عرب میں شرعی سزاووٴں کا رواج جہاں چور کا ہاتھ کاٹ دیا جاتا جبکہ قتل ، ڈکیتی اور منشیات سمگلنگ کی سزا مجرم کا سرقلم کرنا ہے۔