نواز شریف کی زندگی خطرے میں ہے، دوبارہ بائی پاس کرنا پڑ سکتا ہے: سابق وزیراعظم کے ذاتی معالج ڈاکٹر عدنان

ویب ڈیسک  ۔ سابق وزیراعظم نوازشریف کے ذاتی معالج ڈاکٹر عدنان کا کہنا ہے کہ نواز شریف کی زندگی کو شدید خطرات لاحق ہیں۔ اگر ان کا فوری علاج نہ کیا گیا تو ہو سکتا ہے نوازشریف کا بائی پاس کرنا پڑ سکتا ہے۔

تفصیلات کے مطابق میڈیا نمائندگان سے بات کرتے ہوئے ڈاکٹر عدنان نے کہا کہ  آغا خان ہسپتال کراچی کی ایک ٹیم نے نوازشریف سے ملاقات کی ہے جس میں انہوں نے سابق وزیراعظم کی بیماری کی ہسٹری حاصل کی ہے۔

انہوں نے کہا کہ نوازشریف کی زندگی کوخطرات لاحق ہیں ان کی دل کی شریانیں بند ہیں ہوسکتا ہے بائی پاس سرجری کی ضرورت پڑ جائے۔

ڈاکٹر عدنان کا کہنا تھا کہ نوازشریف کے بیرونی معالج سے بھی رابطے میں ہیں، جس سطح پر انہیں اسپتال داخل کرنے کی ضرورت پڑے گی انہیں داخل کردیا جائے گا۔
یاد رہے کہ اس سے قبل لندن میں قیام کے دوران نوازشریف لندن کے ہارلے سٹریٹ کلینک میں زیر علاج رہے تھے اور وہاں ان کی ہارٹ سرجری ہو چکی ہے۔