شریف خاندان کی خواتین کےطلبی نوٹس منسوخ، سوالنامے گھر بھیجے جائیں گے، منی لانڈرنگ کیس کی نگرانی گا: چئیرمین نیب
یہ خبر لائیک کریں

ویب ڈیسک – قومی احتساب بیورو (نیب) نے شریف خاندان کی خواتین کو نیب میں پیش ہونے کے تمام نوٹسز منسوخ کرنے کا اعلان کر دیا۔ اور ساتھ ہی شریف خاندان کی خواتین کو ان کے گھروں میں سوالنامہ بھیجنے کا فیصلہ کر لیا۔  چئیرمین نیب جسٹس ریٹائرڈ جاوید اقبال نے نوٹسز کی منسوخی کا حکم دیا اور ساتھ ہی منی لانڈرنگ میں ملوث شریف خاندان کے کیسز کی خود نگرانی کا فیصلہ کر لیا۔

تفصیلات کے مطابق  چئیرمین نیب جسٹس ریٹائرڈ جاوید اقبال نے آج لاہور میں نیب حکام کے ساتھ ملاقات میں حکم دیا کہ منی لانڈرنگ کیس میں شریف خاندان کی خواتین کو طلب کرنے کے تمام نوٹسز منسوخ کئے جائیں۔ شریف خاندان کی خواتین سے تفتیش کے لئے انہیں ان کے گھروں میں سوالنامے بھجوائے جائیں گے۔

شریف خاندان ایک بار پھر نیب کے نشانے پر، اثاثہ جات کیس میں شہباز شریف کی اہلیہ اور بیٹیاں بھی طلب

نیب لاہور میں چئیرمین نیب کو منی لانڈرنگ کیس پر بریفنگ دی گئی۔ چئیرمین نیب جسٹس ریٹائرڈ جاوید اقبال نے کہا کہ وہ شریف فیملی کے خلاف کیسز کی براہ راست نگرانی کریں گے۔

یاد رہے کہ نیب نے شہباز شریف کی اہلیہ نصرت شہباز شریف کو 17اپریل ، ان کی صاحبزادیوںرابعہ عمران کو 18اپریل سہ پہر تین بجے جبکہ جویریہ علی کو 19اپریل سہ پہر تین بجے نیب لاہور ہیڈ کوارٹر میں پیش ہونے کا حکم دیا گیا تھا۔

یہ خبر لائیک کریں