پشاور: رہائشی علاقے میں سیکیورٹی فورسز اور دہشت گردوں کا مقابلہ، 5 دہشت گرد ہلاک، ایک اہلکار شہید

ویب ڈیسک – صوبہ خیبر پختونخواہ کے دارالحکومت پشاور کے رہائشی علاقے حیات آباد میں سیکورٹی فورسز اور دہشتگردوں کے درمیان فائرنگ کا تبادلہ ہوا ہے۔ رہائشی علاقے میں چھپے 5 دہشت گرد فورسز کے آپریشن میں ہلاک ہو گئے جبکہ اینٹی ٹیررزم سکواڈ کا ایک اہلکار بھی شہید ہوا ہے۔ شہید ہونے والے اہکار کا قمر عالم تھا۔

تفصیلات کے مطابق گزشتہ رات پولیس نے حیات آباد فیزسیون کے سیکٹر ٹین کے گھر میں دہشتگردوں کی موجودگی کے خلاف آپریشن شروع کیا جس میں دونوں اطراف سے فائرنگ کا تبادلہ ہوا، فائرنگ کے نیتجے میں 5 دہشتگرد مارے گئے جبکہ اے ٹی ایس کا ایک جوان قمر عالم شہید اور 2 اہلکار ذخمی ہوگئے۔

دوران آپریشن بھاری ہتھیاروں کا استعمال کیا گیا جس کی وجہ سے علاقے میں خوف و ہراس پھیل گیا۔ آپریشن میں پولیس کی مدد کے لیے پاک آرمی کے جوان بھی پہنچ گئے بعد میں کوڑ کمانڈر پشاور شاہین مظہر بھی موقع پر پہنچ گئے اور آپریشن کا معائنہ کیا۔ سی سی پی او کے مطابق آپریشن اس وقت آخری مراحل میں داخل ہوچکا ہے، آپریشن مکمل کرنے میں کچھ وقت اور لگے گا جبکہ اطراف کا ایریا کلیئر کروالیا گیا ہے۔

سی سی پی او پشاور قاضی جمیل کے مطابق جاری آپریشن اپنے آخری مرحلے میں ہے تاہم سیکیورٹی فورسز نے اطراف کے علاقوں کو کلیئر کرا لیا ہے جب کہ دہشت گرد جس مکان میں موجود ہیں اس کی بالائی منزل پر آپریشن جاری ہے۔

یاد رہے کہ گزشتہ رات پشاور کے علاقے حیات آباد کے ایک مکان پر ملنے والی اطلاع پہ جب چھاپہ مارا گیا تو وہاں موجود دہشت گردوں نے پولیس پراندھا دھند فائرنگ کردی  جس کے نتیجے میں ایک اہلکار 50 سالہ قمر شہید ہوگیا۔ پولیس کمانڈوز نے موقع پر پہنچ علاقے کو گھیرے میں لے لیا۔

صوبائی وزیر اطلاعات نے کئی گھنٹے جاری رہنے والے آپریشن کے دوران بتایا کہ پولیس اور سیکیورٹی فورسز کا آپریشن جاری ہے۔ انہوں نے تصدیق کی کہ پولیس کے اور سیکیورٹی فورسز کے مکان میں داخل ہونے پر دوبارہ فائرنگ کی گئی اورتین راکٹ لانچر بھی مارے گئے۔