ملک میں صدارتی نظام لانے کی کوشش کی گئی تو بھرپور مخالفت کی جائے گی، ہم ایسا نہیں ہونے دیں گے: سابق صدر آصف علی زرداری

ویب ڈیسک – پاکستان پیپلز پارٹی کے شریک چئیرمین اور سابق صدر آصف علی زرداری کا کہنا ہے کہ ملک میں صدارتی نظام لانے کی باتیں کی جار رہی ہیں، ہم صدارتی نظام کے حق میں نہیں، اگر حکومت کی جانب سے ایسی کوئی کوشش کی گئی تو ہم اس کی بھرپور مخالف کریں گے۔

تفصیلات کے مطابق آج اسلام آباد احتساب عدالت میں پیشی کے بعد صحافیوں سے گفتگو میں سابق صدر آصف علی زرداری نے کہا کہ یہ روز پاکستان میں نیا تجربہ کرنے کے موڈ میں ہیں تاہم صورتحال دن بدن بدتر سے بدتر ہوتی جا رہی ہے۔ ملک میں صدارتی نظام کی باتیں ہو رہی ہیں لیکن ہم  صدارتی نظام کے حق میں نہیں، انھیں کوشش کرنے دیں تاہم ہم اس کی بھرپور مخالفت کریں گے اور حکومت کو روکیں گے۔

یاد رہے کہ جعلی اکاوٴنٹس کیس میں پاکستان پیپلزپارٹی کے چئیرمین اور سابق صدر آصف زرداری اپنی ہمشیرہ فریال تالپور کے ہمراہ اسلام آباد کی احتساب عدالت عدالت میں پیش ہوئے جہاں دونوں حاضری لگوانے کے بعد واپس روانہ ہوگئے۔