اسرائیل کی گھناوٴنی حرکت، مقبوضہ بیت المقدس میں تاریخی مسجد کو نائٹ کلب میں تبدیل کر دیا

ویب ڈیسک – صیہونی ریاست اسرائیل مسلمانوں اور ان کے جذبات کو تکلیف پہنچانے کا کوئی موقع ہاتھ سے جانے نہیں دیتی۔ جس کی حالیہ مثال یہ ہے کہ اسرائیل نے مقبوضہ بیت المقدس میں واقع ایک تاریخی مسجد کو نائٹ کلب میں تبدیل کر دیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق اسرائیل نے مقبوضہ بیت المقدس کی تاریخی مسجد الاحمر کو نائٹ کلب میں تبدیل کر دیا۔ تاریخی مسجد کو نائٹ کلب میں تبدیل کرنے پر  فلسطینی اسلامک اینڈوومنٹ ایجنسی کے سیکرٹری خیر طبری کے مطابق یہ مذہبی دہشت گردی ہے۔

یہ فلسطین کی تاریخی مساجد میں سے ایک مسجد ہے جو 1948ء میں یہودیوں کے قبضے میں چلی گئی تھی۔ؤ۔ فلسطینی مسلمانوں نے اسے دوبارہ مسجد بنانے کی درخواست دی لیکن تاحالعدالت نے کوئی فیصلہ نہیں دیا۔

یاد رہے کہ اس سے قبل بھی کئی مساجد کو شراب خانوں اور نائٹ کلبوں میں تبدیل کیا جا چکا ہے۔