پی سی بی میں شدید اختلافات، وسیم خان کی بطور ایم ڈی تقرری مسترد، ڈیپارٹمنٹل کرکٹ ختم کرنے حکم بھی ہوا میں اڑا دیا گیا

ویب ڈیسک – پاکستان کرکٹ بورڈ کی گورننگ باڈی کا کوئٹہ میں ہونے والا 53واں اجلاس شدید اختلافات کا شکار ہو گیا۔ بورڈ کے 7 میں سے 5 اراکین نے چئیرمین پی سی بی احسان مانی کے احکامات ماننے سے انکار کرتے ہوئے اجلاس چھوڑ کر چلے گئے۔ احسان مانی اکیلے میٹنگ روم میں بیٹھے رہ گئے۔ تبدیلاں ہو کر رہیں گی احسان مانی بھی ڈٹ گئے۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان کرکٹ بورڈ کی گورننگ باڈی کا کوئٹہ میں ہونے والا 53واں اجلاس کوئٹہ میں منعقد ہوا۔ اجلاس اس وقت بدمزگی کا شکار ہوا جب پی سی بی کے گورننگ بورڈ اراکین نے بورڈ کے منیجنگ ڈائریکٹر وسیم خان کی تقرری تسلیم کرنے سے انکار کردیا۔ گورننگ بورڈ کے 7 میں سے 5 ارکان نعمان بٹ، شاہ ریز روکڑی، کبیر خان، شاہ دوست اور ایاز خان نے اجلاس میں پیش کیے جانے والا ایجنڈا مکمل طور پر مسترد کردیا

اراکین نے ڈیپارٹمنٹل کرکٹ ختم کرنے کے پی سی بی کے فیصلے کو تسلیم کرنے سے انکار کرتے ہوئے ایم ڈی وسیم خان کی تقرری کو بھی چیلنج کردیا اور چیئرمین احسان مانی کی جانب سے وسیم خان کے اختیارات سے متعلق ایجنڈا پیش کر نے سے قبل ہی ماننے سے انکار کردیا۔