بلاکوٹ حملے میں کوئی پاکستانی جاں بحق نہیں ہوا تھا، سشما سوراج کا اعتراف

ویب ڈیسک – بالاکوٹ میں بھارتی فضائیہ کے حملے پر مسلسل جھوٹ بولنے اور منفی پراپیگنڈہ کرنے کے بعد آخر کار بھارت نے تسلیم کر لیا کہ اس حملے میں پاکستان کی فوج اور شہریوں کا کسی قسم کا کوئی جانی نقصان نہیں ہوا تھا۔

تفصیلات کے مطابق  بھارتی وزیر خارجہ اور حکمران جماعت بھارتیہ جنتا پارٹی کی رہنما سشما سواراج نے خود ہی اپنی حکومت  کے جھوٹ سے پردہ اٹھاتے ہوئے کہا ہے کہ پاکستانی علاقے بالاکوٹ میں بھارت کی دراندازی کے نتیجے میں نہ تو کوئی پاکستانی شہری اور نہ ہی فوجی جاں بحق ہوا۔

دوسری طرف بھارتی وزیر خارجہ کے اس بیان پر ٹویٹر پر رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے ڈی جی آئی ایس پی آر نے کہا ہے کہ آخر کار سشما سوراج نے سچ بول ہی دیا۔

میجر جنرل آصف غفور کا کہنا تھا کہ زمینی حقائق نے بھارت کو مجبور کر دیا ہے کہ وہ سچ بولیں، امید ہے بھارت بقیہ جھوٹے بیانات سے متعلق بھی سچ بولے گا۔ بھارتی فضائیہ اپنے طیارے گرائے جانے کی بھی تردید کرے کیوں کہ وہ پاک فضائیہ کا ایف 16 طیارہ گرانے کا جھوٹا دعویٰ کرتی رہی ہے، بھارت کا 2016ء میں سرجیکل اسٹرائیک کا دعویٰ بھی جھوٹا تھا تاہم دیر آید درست آید۔

یاد رہے کہ 27 فروری کو پاک فضائیہ  نے بھارتی فضائیہ کے 2 طیاروں کو تباہ کردیا تھا جب کہ بھارتی طیارے کے پائلٹ ونگ کمانڈر ابھی نندن کو گرفتار کرکے بھارت کے حوالے کر دیا تھا۔ حملے کے بعد بھارتی میڈیا اور حکومت کا کہنا تھا کہ بھارتی فضائیہ کے حملے میں 250 سے 300 پاکستانی جاں بحق ہوئے اور دہشتگردوں کے تریننگ کیمپ تباہ ہوئے تاہم اب سشما سوراج نے خود کہہ دیا ہے کہ اس حملے میں پاکستان کا کوئی جانی نقصان نہیں ہوا تھا۔