ایسٹر کے موقع پر سری لنکا میں دہشت گردی، 6 بم دھماکوں میں 138افراد ہلاک، 500 سے زائد زخمی

ویب ڈیسک ۔ سری لنکا کے دارالحکومت کولمبو سمیت کئی شہروں کو مسیحی تہوار ایسٹر کے موقع پر دہشتگردی کا نشانہ بنایا گیا ہے۔ ایسٹر کے موقع پر سرلنکا میں 6 مختلف مقامات پر بم دھماکے کئے گئے جن میں اب تک کم از کم 138افراد ہلاک جب کہ 500زائد زخمی ہو گئے ہیں۔ دھماکوں میں گرجا گھروں اور ہوٹلوں کو نشانہ بنایا گیا۔

تفصیلات کے مطابق سری لنکا میں ایسٹر کےموقع پر تین گرجا گھروں اور تین ہوٹلوں میں دھماکوں سے  138 افراد ہلاک اور 400 سے زائد زخمی ہوگئے ہیں۔

ایک چرچ کو سری لنکا کے دارالحکومت کولمبو اور دوسرے  کو کولمبو کے شمال میں نیگومبو کے علاقے میں چرچوں کو اس نشانہ بنایا گیا جب وہاں بڑی تعداد میں مسیحی برادری کے لوگ ایسٹر کی تقریبات منا رہے تھے۔

جبکہ کوچھی کاڈے، کٹواپٹیا اور بٹیکالوا میں تین گرجا گھروں کو نشانہ بنایا گیا ہے جبکہ دارالحکومت کولمبو میں تین ہوٹلوں دی شینگریلا، سینامن گرانڈ اور کنگز بری کو نشانہ بنایا گيا ہے۔

پولیس حکام کے مطابق کولمبو میں 45 ،نیگومبو میں 67 اور بٹی کلاؤ میں 25 ہلاکتوں کی تصدیق ہوئی ہے۔ خبر ایجنسی ابھی تک 9 غیر ملکیوں کے ہلاک ہونے کی تصدیق کی ہے تاہم  شہریت نہیں بتائی گئی۔

دھماکوں کے بعد پورے سری لنکا میں سکیورٹی سخت کر دی گئی ہے جب کہ ائیرپورٹ اور ریلوے اسٹیشنوں پر بھی ہائی الرٹ کردیا گیا ہے، دوسری جانب دہشت گردی کے باعث ملک بھر کے اسکولوں میں 2 روز کی چھٹی دیدی گئی۔

پاکستان کی جانب سے سری لنکا میں دھماکوں اور دہشت گردی کی مذمت کی گئی ہے، ترجمان دفترخارجہ کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ پاکستان کے عوام اور حکومت سری لنکن عوام کے ساتھ کھڑے ہیں