سلیکٹڈ وزیراعظم کو اسمبلی میں گھسنے نہیں دیں گے: بلاول بھٹو

ویب ڈیسک – گزشتہ روز قومی اسمبلی کے اجلاس میں شدید ہنگامہ آرائی ہوئی۔ سب سے پہلے بلاول بھٹو زرداری نے وزیراعظم عمران خان اور حکومت کو شدید آڑے ہاتھوں لیا۔

چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو نے حکومت پر طنز کے تیر چلاتے ہوئے کہا کہ عوام مہنگائی کے سونامی میں ڈوب رہے ہیں، بجلی گیس اور پٹرول کے بعد ادویات کی قیمتیں بھی آسمان سے باتیں کرنے لگی ہیں۔ انہوں نے عمران خان کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ ہمارا سلیکٹڈ وزیراعظم نالائق اور نااہل ہے اگر نکالنا ہے تو انہیں نکالا جائے۔

چیئرمین پی پی پی نے  کہا کہ نااہل وزراء کو نکالنے میں اتنی دیر لگا کر ملک و قوم کا قیمتی وقت ضائع کیا گیا، دہشت گردوں کی حمایت میں بیان دینے والے وزراء کو کسی صورت برداشت نہیں کیا جائے گا، سیاسی انجینیئرنگ کرنے والے وزیر کسی طور قابل قبول نہیں۔

بلاول بھٹو زرداری نے وزیراعظم عمران خان کو ’سلیکٹڈ وزیراعظم‘ کہا تو حکومتی وزرا نے احتجاج شروع کر دیا۔ اس موقع پر بلاول بھٹو نے کہا کہ اگر مجھے بات نہیں کرنے دی گئی تو پھر آپ کے وزیراعظم کو گھسنے نہیں دیں گے، مجھے میری تقریر پوری کرنے دیں۔