کرپشن کے پیسے پر آکسفورڈ یونیورسٹی میں داخلہ لیا ہو تو ابو، پھوپھو، انکلز کی لوٹ مار نظر نہیں آتی: فردوس عاشق اعوان کا بلاول پر وار

ویب ڈیسک – وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے چئیرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو زرداری کو ٹویٹر تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا ہے کہ کرپشن کے پیسے پر آکسفورڈ یونیورسٹی میں داخلہ لیا ہو تو ابو، پھوپھو، انکلز کی لوٹ مار نظر نہیں آتی۔

وفاقی وزیر نے بلاول بھٹو زرداری کے اس ٹویٹ کا جواب دیا جس میں چئیرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو زرداری نے وزیراعظم عمران خان کے جاپان اور جرمنی کے ایک بارڈر ہونے کی لفظی غلطی پر آکسفورڈ یونیورسٹی کو ٹیگ کرتے ہوئے  کہا تھا کہ جب آپ قابلیت کی بجائے کی بجائے کرکٹ کی وجہ سے کسی کو آکسفورڈ یونیورسٹی میں داخلہ دیں گے تو ایسا ہی ہو گا۔

بلاول کے اس ٹویٹ کے جواب میں فردوس عاشق اعوان نے ٹویٹ کرتے ہوئے کہا کہ “جب کسی نے کرپشن کے پیسے پر آکسفورڈ یونیورسٹی میں داخلہ لیا ہو تو ایسے ہی ہوتا ہے کہ ابو، پھوپھو، انکلز کی لوٹ مار نظر نہیں آتی”

اس کے علاوہ حکومت رکن افتخار درانی نے بھی بلاول بھٹو کو ایکسیڈنٹل چئیرمین کہتے ہوئے کہا کہ وزیراعظم عمران خان نے یہ نہیں کہا کہ جرمنی اور جاپان کا بارڈر ملتا ہے ، انہوں نے وضاحت دیتے ہوئے کہا کہ وزیراعظم نے کہا تھا جاپان اور جرمنی دونوں ممالک نے بارڈرپر انڈسٹری بنائی تھی،  جسے آپ اور اس ملک کچھ پڑھے لکھے لوگ سمجھ نہ سکے۔

یاد رہے کہ گزشتہ دو روز قومی اسمبلی میں حکومتی اراکین اسمبلی اور پیپلزپارٹی کے اراکین کے درمیان شدید گرما گرمی دیکھنے میں آرہی ہے اور دونوں جماعتیں ایک دوسرے پر ذاتی حملوں پر اتر آئی ہیں۔