بلاول کی لفظی گولہ باری کے بعد مریم نواز کی باری، وزیراعظم عمران خان پر شدید تنقید ،ایران میں بیان کو ملکی تذلیل قرار دے دیا

ویب ڈیسک ۔ وزیراعظم عمران خان کا دورہ ایران ان پر کافی بھاری پڑتا جا رہا ہے، کبھی جرمنی اور جاپان کے بارڈر کا بیان اور کبھی ایران کے خلاف پاکستانی سرزمین کا استعمال کا بیان وزیراعظم عمران خان کو اپنے سیاسی مخالفین کی جانب سے شاید ہی کبھی اتنی سخت تنقید کا سامنا کرنا پڑا ہو۔

چئیرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو زرداری کی جانب سے لگاتار دو دن کی لفظی گولہ باری کے بعد اب سابق وزیراعظم نواز شریف کی صاحبزادی اور مسلم لیگ ن کی رہنما مریم نواز نے بھی وزیراعظم عمران خان کو ہدف بناتے ہوئے کھری کھری سنا دیں۔

مریم نواز نے کافی عرصے کی خاموشی کے بعد آج ٹویٹر پر وزیراعظم کے ایران میں ایک متنازعہ بیان پر اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ  ” سیاسی تاریخ میں کسی نے بھی اپنے ملک کی کسی دوسرے ملک میں غیرملکی لیڈرز کے ساتھ بیٹھ کر تذلیل نہیں کی، ناجانے ایرانی لیڈرشپ کیا سوچ رہی ہوگی۔”

 

یاد رہے کہ وزیراعظم عمران خان نے اپنے دورہ ایران میں کہا تھا کہ ماضی میں پاکستان کی سرزمین ایران کے خلاف دہشت گردی کے لئے استعمال ہوتی رہی ہے۔ عمران خان کے اس بیان نے اپوزیشن جامعتوں کو احتجاج پر مجبور کر دیا اور آج قومی اسمبلی کی کارروائی کے دوران اپوزیشن جماعتوں نے وزیراعظم سے ان کے بیان پر وضاحت بھی مانگ لی۔