مسلم لیگ ن نے اپنے دورِ حکومت میں قرضہ لے کر مہنگائی کم کی تھی، اسحاق ڈار کا ویڈیو پیغام میں اعتراف

ویب ڈیسک – مسلم لیگ ن کے سابق وزیراخزانہ اسحاق ڈار نے ایک ویڈیو پیغام میں اس بات کا اعتراف کیا ہے کہ لیگی دور حکومت میں انہوں نے بیرونی قرضے لے کر ملک میں مہنگائی کم تھی۔

تفصیلات کے مطابق مسلم لیگ ن کے دور حکومت میں اشیا خورونوش کی قیمتوں میں کمی وجہ اس وقت کے وفاقی وزیرخزانہ اسحاق ڈارنے سوشل میڈیا پر ایک ویڈیو میں پیغام میں  بتاتے ہوئے   انکشاف کیا ہے کہ ن لیگ کے دور حکومت میں بیرونی قرضوں سے ملک میں قیمتوں کو کنٹرول کیا گیا تھا۔

اسحاق ڈار نے تحریک انصاف کے اس دعوے کو یکسر مسترد کیا جس میں کہا گیا تھا کہ مسلم لیگ ن نے اپنے دور حکومت میں 15 ہزار ارب ڈالر قرضہ لیا، سابق وزیر خزانہ نے وضاحت کرتے ہوئے بتایا کہ ن لیگ کی حکومت نے صرف 9 ہزار 2 سو ارب ڈالر قرض لیا تھا۔

 

انہوں نے مزید کہا کہ  مسلم لیگ ننے اپنے پانچ سالہ دور میں ملک بھر میں انفرا اسٹرکچر کا جال بچھایا اور ترقیاتی کاموں کا جال بچھایا۔ انہوں نے کہا کہ مسلم لیگ ن کے پانچ سالہ دور کے بعد ملک میں افراط زر کی شرح 3.6 فیصد تھی جو چالیس سال کی کم ترین سظح تھی، ہم نے نہ تو روز مرہ اشیائے ضروریات کی قیمتوں میں اضافہ ہونے دیا اور نہ ہی ادویات کی قیمتیں بڑھنے دیں۔

یاد رہے کہ سابق وزیر خزانہ اسحاق ڈار کرپشن الزامات میں پاکستانی عدالتوں کو مطلوب ہیں اور وہ ان دنوں لندن میں مفروری کی زندگی بسر کر رہے ہیں۔