علاج کے لئے لندن جانا چاہتا ہوں، نواز شریف نےسپریم کورٹ میں درخواست دائر کر دی

ویب ڈیسک – سابق وزیراعظم نواز شریف نے  مدت ضمانت ختم ہونے کے قریب سپریم کورٹ آف پاکستان سے بیرون ملک جانے کی اجازت مانگ لی، نوازشریف کے وکلا نے باقاعدہ درخواست بھی دائر کر دی۔

تفصیلات کے مطابق سابق وزیراعظم نوازشریف نے سپری کورٹ آف پاکستان میں ایک درخواست دائر کی ہے جس میں انہوں نے سپریم کورٹ علاج کے لئے بیرون ملک جانے کی اجازت مانگی ہے۔ درخواست میں موقف اختیار کیا گیا ہے نواز شریف کا علاج پاکستان میں ممکن نہیں،  نواز شریف کا علاج اسی ڈاکٹر سے ممکن ہے جس نے برطانیہ میں ان کا علاج کیا تھا۔

دائر کی گئی درخواست میں یہ بھی استدعا کی گئی ہے کہ نوازشریف کو اس سے قبل طبی بنیادوں ضمانت دی گئی تھی۔26ہ نواز شریف کو دل اور گردوں کے امراض لاحق ہیں، اس کے علاوہ سابق وزیراعظم ہائی بلڈ پریشر، شوگر اور گردوں کے تیسرے درجے کی بیماری میں مبتلا ہیں لہذا صرف پاکستان کے اندر نواز شریف کو علاج کے لیے پابند کرنے کے 26 مارچ کے فیصلے پر نظر ثانی کی جائے۔

یاد رہے کہ نوازشریف کو طبی بنیادوں ہر 6 ہفتے کی ضمانت دی گئی تھی جو کہ اگلے ماہ مئی کے پہلے ہفتے میں ختم ہو رہی جس کے بعد نواز شریف کو خود سے گرفتاری دینا ہو گی بصورت دیگر انہیں گرفتار کر کے اڈیالہ جیل منتقل کر دیا جائے گا۔

https://dailynewslounge.com/2018/10/07/9438/