بیلٹ اینڈ روڈ منصوبے کا حصہ ہونے پر فخر ہے، عمران خان کا بیلٹ اینڈ روڈ فورم سے خطاب

ویب ڈیسک – پاکستان کے وزیراعظم عمران خان ان دنوں چین میں بلیٹ اند روڈ فورم میں شرکت کے لئے موجود ہیں۔ بیلٹ ایند روڈ فورم کے افتتاحی دن وزیراعظم عمران خان نے شرکا سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ مجھے خوشی ہے کہ میں اس فورم میں شرکت کر رہا ہے اور پاکستان کا بیلٹ اینڈ روڈ منصوبے کا حصہ ہونے پر فخر ہے۔

تفصیلات کے مطابق چین میں ہونے والے بیلٹ اینڈ روڈ فورم میں پاکستان سمیت دنیا کے کئی ممالک سربراہ حصہ لے رہے ہیں۔ پاکستان کے وزیراعظم بھی گزشتہ روز فورم میں شرکت کرنے کے لئے چین کے شہر بیجنگ پہنچے تھے۔ آج فورم کی ابتدائی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے پاکستان کے وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ میں اس فورم میں شرکت کرنے پر بے حد خوشی محسوس کر رہا رہے اور ہمیں فخر ہے کہ پاکستان بیلٹ اینڈ روڈ منصوبے کا حصہ ہے۔

اس موقع پر عمران خان نے  بیلٹ اینڈ روڈ فورم میں ترقی کیلئے پانچ تجاویز پیش کر دیں۔ انہوں نے کہا وائٹ کالر کرائم کا خاتمہ، ماحولیاتی تبدیلی سے نمٹنے، ٹورازم کوریڈور، غربت میں کمی کیلئے فنڈ کا قیام اور آزاد تجارت کیلئے اقدامات کرنا ہونگے۔ انہوں نے کہا کہ دنیا میں جیو پولیٹکل غیر یقینی صورتحال اور تجارت کے میں بڑھتی ہوئی عدم مساوات اور رکاوٹوں کی موجودگی میں بیلٹ اینڈ روڈ منصوبہ تعاون، اشتراکیت، روابط اور مشترکہ خوشحالی کا ماڈل فراہم پیش کرتا ہے۔

وزیراعظم پاکستان نے کہا چین کے تعاون سے گوادر تیزی سے دنیا کا تجارتی مرکز بن رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان خطے میں امن و استحکام کیلیے بھرپور کوششیں کر رہا ہے، پُر امن اور ترقی یافتہ دنیا کیلیے ہماری کوششیں جاری ہیں۔

 

پاکستان کے وزیراعظم کے علاوہ روسی صدر ولادمیر پیوٹن نے فورم سے خطاب میں کہا کہ  بیلٹ اینڈ روڈ فورم علاقائی ترقی کیلیے اہم ثابت ہوگا۔ ان کا کہنا تھا کہ شاندارمشترکہ مستقل کیلیےاجتماعی کوششوں کی ضرورت ہے۔ پیوٹن نے اپنے خطاب میں کہا کہ مالیاتی اورکرنسی پالیسی کے استحکام کیلئے چین کے ساتھ مل کر کام جاری ہے، صنعتی ترقی کو فروغ دینے کیلئے مناسب اقدامات ضروری ہے۔انہوں نے دہشتگردی اورانتہاپسندی کے خاتمے کیلئےعالمی کوششوں کی ضرورت پر زور دیا اور دوسرے ممالک کی آزادی اورخود مختاری کا احترام کرنے کی  تاکید کی۔

بیلٹ اینڈ روڈ فورم کے میزبان چین کے صدر شی چن پنگ اور روسی صدر نے خطاب کیا، فورم میں متعدد عالمی رہنما بھی شریک ہیں۔ چینی صدر شی چن پنگ نے بی او آر کو رابطے مضبوط کرنے کا ذریعہ قرار دیا اور ترقی پذیر ملکوں کے لیے دیر پا ترقی کی اہمیت پر زور دیا۔ چینی صدر نے کہا دوسرےممالک کی مصنوعات کا چینی مارکیٹ میں خیر مقدم کریں گے، بیلٹ اینڈ روڈ فورم تمام شریک ممالک کو ترقی کے یکساں مواقع فراہم کرے گا۔

یاد رہے کہ پاکستان کے وزیراعظم عمران خان کل چار روزہ دورے پر چین کے شہر بیجنگ پہنچے تھے اس موقع پر ان کا پرتپاک استقبال کیا گیا تھا۔ وزیراعظم عمران خان اپنے دورے کے دوران چین کی کمپنیوں کے سربراہان سے ملاقات بھی کریں گے۔