نوازشریف کے خاندان والوں کی عمران خان سے رحم کی اپیل، خواجہ آصف کی گول مول الفاظ میں تصدیق

ویب ڈیسک ۔ مسلم لیگ ن کے رہنما خواجہ آصف نے سنئیر صحافی حامد میر کے اس دعویٰ کی ڈھکے چھپے الفاظ میں تصدیق کر دی ہے جس میں انہوں نے کہا تھا کہ نوازشریف کے خاندان کے کچھ غیر سیاسی لوگ وزیراعظم عمران خان سے مل ک ر رحم کی اپیل کر رہے ہیں۔

آج سوشل میڈیا کی ویب سائٹ ٹویٹر پر خواجہ آصف نے وضاحتی ٹویٹ کرتے ہو ئے کہا کہ “حامد میر نے نہیں کہا کہ شریف خاندان کے فرد نے رابطہ کیااورحقیقت بھی یہی ھے۔ھمیں عدالت سے انشاءاللہ انصاف ملے گا۔اگر بقول میر صاحب شریف خاندان کے کس غیر سیاسی عزیز نے ذاتی حثیت میں رابطےکی کوشش کی ھے تو نواز شریف کی مرضی بغیر اور وہ قطعی طور لاعلم ہیں”

خواجہ آصف کی اس وضاحت سے لگتا ہے کہ واقعی شریف خاندان کے لوگوں نے نوازشریف کی رہائی اور بیرون ملک روانگی کے لئے وزیراعظم عمران خان سے رحم کی اپیل کی ہےلیکن کوئی بھی ن لیگی رہنما کھل کر اس موضوع پر بات کرنے کو تیار نہیں ہے۔

یاد رہے کہ پاکستان کے سنئیر ترین صحافی اور تجزیہ کار حامد میر نے نجی چینل پر گفتگو کرتے ہوئے انکشاف کیا کہ نواز شریف کے اہل خانہ جن کا سیاست سے کوئی تعلق نہیں وہ وزیراعظم عمران خان کے پاس جا کر رحم کی اپیلیں کرتے پھر رہے ہیں۔

نوازشریف کے خاندان کے لوگ عمران خان کو جا کر کہتے ہیں “رحم کریں، کرم کریں” حامد میر کا انکشاف

حامد میر نے کہا کہ جب ملک کے وزیراعظم کو ایسے شخص کی جانب سے رحم کا پیغام جائے جو کبھی خلائی مخلوق کا دعویٰ کرتا تھا تو کبھی انقلاب کا، انہوں نے کہا کہ ایسی صورتحال میں عمران خان کو کوئی خطرہ نہیں ہے، انہیں اپنی ناکام پالیسیوں کی کوئی پرواہ نہیں ہے۔

حامد میر نے کہا کہ مسلم لیگ ن اوپر اوپر سے شور مچا رہی ہے لیکن اندر خانے وہ رحم کی اپیلیں کر رہی ہے اور یہی حال پیپلزپارٹی کا ہے۔ حامد میر نے مزید کہا کہ اپوزیشن صرف اسمبلی میں شور مچا رہی ہے لیکن اندر سے کھوکھلی ہے۔