بالی وڈ اداکار و سیاستدان شتروگن سنہا انتخابی جلسے میں قائداعظم کی تعریف کر کے پھنس گئے

ویب ڈیسک ۔ بالی وڈ کے سابق سپر سٹار اور موجودہ سیاستدان شترو گن سنہا انتخابی جلسے میں بانی پاکستان قائداعظم محمد علی جناح کی تعریفیں کرتے رہے۔ جس کے بعد ان پر کئی بھارتی حلقوں سے شدید تنقید بھی کی گئی۔

تفصیلات کے مطابق حال ہی میں بھارتیہ جنتا پارٹی کو چھوڑ کر کانگریس میں شامل ہونے والے بالی وڈ سٹار شتروگن سنہا نے بھارتی ریاست مدھیا پردیش میں ایک انتخابی جلسے کے دوران بانی پاکستان قائداعظم کی تعریفوں کے پل باندھ دیئے۔ شتروگن سنہا نے انگریزوں کے خلاف لڑی جانے والی جدوجہد آزادی میں حصہ لینے والے تمام بڑے لیڈران کی تعریفوں کے انبار لگائے دیئے۔

انہوں نے انتخابی مہم میں جب مہاتما گاندھی، جواہر لال نہرو اور سردار ولا بھائی پاٹیل کا ذکر کیا تو ساتھ ہی قائداعظم محمد علی جناح کی تحریک آزادی کی کوششوں کو بھی سراہا۔ شتروگن سہنا کی جانب سے قائداعظم کا نام لینے پر انہیں بھارت میں کئی حلقوں کی جانب سے تنقید کا نشانہ بھی بنایا جا رہا ہے۔ اور بھارتی میڈیا کی جانب سے دعویٰ کیا گیا ہے کہ شتروگن سنہا نے وضاحت کی ہے کہ وہ مولانا آزاد کا نام لینا چاہ رہے تھے تاہم غلطی سے محمد علی جناح کا نام لے بیٹھے۔

یاد رہے کہ قائداعظم محمد علی جناح آل انڈیا مسلم میں شمولیت سے پہلے کانگریس کا اہم حصہ رہے تھے، تاہم بعد میں ہندو لیڈروں کی اصلیت جاننے کے بعد انہوں نے کانگریس چھوڑ کر مسلم لیگ میں شمولیت اختیار کر لی تھی۔