بھارتی طیارے گرانے والے پاکستانی پائلٹس کو اعزاز سے نوازا جائے گا: ڈی جی آئی ایس پی آر

ویب ڈیسک – پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ نے آج راولپنڈی میں ایک اہم پریس کانفرنس کی۔ اپنی پریس کانفرنس میں ڈی جی آئی ایس پی میجر جنرل آصف غفور نے کہا  کہ 27 فروری کو گزرے 2 ماہ ہوگئے لیکن بھارت ان گنت جھوٹ بولے جارہا ہے، ہم ان کا جواب دے سکتے ہیں لیکن ہم ذمہ داری کا مظاہرہ کررہے ہیں، پاک فضائیہ نے بھارت کے 2 طیارے گرائے جس کا ملبہ پوری دنیا نے دیکھا، بھارتی فضائیہ نے اپنا ہی ہیلی کاپٹر مارگرایا اور بلیک باکس چھپالیا۔

میجر جنرل آصف غفور نے مزید کہا کہ حالات بہتر ہونے کا انتظار کر رہے ہیں بھارتی طیارے گرانے والے پاک فضائیہ کے دونوں پائلٹس سکوارڈرن لیڈر حسن صدیقی اور نعمان علی خان کو اعزاز سے نوازا جائے گا۔

اپنی اس اہم ترین پریس کانفرنس میں ڈی جی آئی ایس پی آر نے کہا کہبھارت کو بتا دیا گیا تھا کہ پلوامہ حملہ میں پاکستان ملوث نہیں ہے۔ جھوٹ کا جواب ایک بار ہی دیا جاتا ہے بار بار نہیں۔ بھارت نے اس کے باوجود پاکستانی سرحدی حدود کی خلاف ورزی کی جس کا پاکستان نے بھر پور جواب دیا۔

آصف غفور نے کہا کہ ہم نے بھارت کے دو جہاز مار گرائے جسے پوری دنیا نے دیکھا اور اگر بھارت نے ہمارا ایف سولہ گرایا تو وہ کہاں گیا ؟ ہم نے بھارت کے حملے کو ناکام بنایا اور میڈیا کو لے جا کر بھی دکھایا گیا۔

ڈی جی آئی ایس پی نے پشتون تحفظ موومنٹ کے حوالےسے بات کرتے ہوئے کہا کہ میجر جنرل آصف غفور کا کہنا تھا کہ پی ٹی ایم والے کدھر تھے جب ان کے گلے کٹ رہے تھے اور فٹ بال کھیلی جارہی تھی، جب حالات ٹھیک ہوگئے تو تحفظ کی بات آگئی، سیکیورٹی اداروں کے ان سے کچھ سوال ہیں، آپ کے پاس کتنا پیسہ ہے اور کہاں سے آرہا ہے، 22 مارچ 2018 کو افغان ایجنسی این ڈی ایس نے انہیں کتنے پیسے دیے اور وہ کہاں ہیں؟

انہوں نے کہا کہ  پی ٹی ایم کو دی گئی مہلت اب ختم ہوگئی، انہوں نے جتنی آزادی لینی تھی لے لی، لیکن ان کے خلاف غیر قانونی راستہ اختیار نہیں کیا جائے گا، جو بھی ہوگا قانونی طریقے سے ہوگا، جن لوگوں آپ ورغلارہے ہیں ان پرقابوپانا مشکل کام نہیں۔