عوام بچ گئی، حکومت نے پٹرول کی قیمت میں اضافہ موخر کر دیا

اسلام آباد – پاکستانی عوام رمضان سے پہلے مہنگائی کے بڑے طوفان سے بچ گئی، وفاقی حکومت نے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کی سمری مسترد کردی۔ اوگرا کی جانب سے پیٹرول کی قیمت میں  14 روپے فی لٹر اضافہ تجویز کیا گیا تھا۔

تفصیلات کے مطابق وفاقی کابینہ کے اجلاس میں پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کی مخالفت کر دی گئی۔اس حوالے سے میڈیا رپورٹس میں بتایا گیا ہے کہ وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت وفاقی کابینہ کا اہم اجلاس ہوا۔ اجلاس میں پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں کے حوالے سے خصوصی بحث ہوئی اور وزرا نے اپنے خدشات ظاہر کئے جو ممکنہ طور پر پٹرول کی بڑھتی قیمتوں کے حوالے سے پیدا ہونے والی صورتحال سے متعلق تھے۔

کابینہ کے اجلاس میں وزیراعظم عمران خان نے تمام وزرا کی رائے کو سننے کے بعد پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کو موخر کرتے ہوئے عوام کو بڑا ریلیف دے دیا۔ وزیراعظم کی معاون خصوصی اور مشیر اطلاعات فردوس عاشق اعوان نے اجلاس کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ نہ کرنے کا اعلان کیا۔ انہوں نے کہا کہ  کہا کہ تحریک انصاف کی حکومت عوام کو ریلیف دے گی جس کے لیے حکومت نے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ موخر کردیا ہے۔

یاد رہے کہ گذشتہ روز اوگرا نے پیٹرول 14 روپے 37  پیسے فی لیٹر مہنگا کرنے کی سفارش کی تھی۔ اوگرا کی سفارشات کے مطابق پیٹرول کی قیمت میں روپے 37 پیسے فی لیٹر، ڈیزل کی قیمت میں فی لیٹر 4 روپے 89 پیسے، مٹی کا تیل فی لیٹر 7 روپے 46 پیسے بڑھانے کی اجازت مانگی گئی تھی۔

ماہرین نے رمضان المبارک کے بابرکت مہینے سے قبل پٹرول  کی قیمتوں میں ممکنہ اضافے سے آنے والے مہنگائی کے طوفان سے خبردار کیا تھا، تاہم حکومت کے اس فیصلے عوام کو کچھ ریلیف ضرور مل جائے گا۔

https://dailynewslounge.com/2019/04/29/12482/