پنجاب حکومت نے ملک ریاض کی جانب سے ڈیم بنانے کی پیشکش مسترد کردی

ویب ڈیسک ۔ حکومت پنجاب نے بحریہ ٹاوٴن کی جانب سے ڈھڈوچہ ڈیم بنانے کی پیشکش مسترد کرتے ہوئے اسے خود تعمیر کرنے کا فیصلہ کر لیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ میں ڈھڈوچہ ڈیم کی تعمیر سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی، سماعت کے دوران حکومت پنجاب نے بحریہ ٹاوٴن کے مالک ملک ریاض کی جانب سے ڈھڈوچہ ڈیم بنانے کی آفر کو مسترد کر دیا اور عدالت کو بتایا کہ پنجاب حکومت اس ڈیم کی تعمیر خود کرے گی۔

آج سپریم کورٹ میں جسٹس عظمت سعید کی سربراہی میں 3 رکنی بینچ نے ڈھڈوچہ ڈیم کی تعمیر سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی۔ سماعت کے دوران سیکریٹری آبپاشی نے عدالت عظمیٰ کو بتایا کہ ڈھڈوچہ ڈیم کی تعمی دسمبر 2021 تک مکمل ہوجائے گی۔

سکیرٹری آبپاشی نے انکشاف کیا کہ  محکمہ آبپاشی کے  ماہرین نے بحریہ ٹاؤن کی جانب سے جو  پیشکش کی گئی اس پر 108 سوالات اٹھائے، اس پر جسٹس عظمت سعید نے کہا کہ جتنے سوالات اٹھائے گئے ہیں اس پر بحریہ پھر نہ ہی سمجھے۔

یاد رہے کہ ڈھڈوچہ ڈیم  راولپنڈی کے قریب ڈھڈوچہ گاؤں میں تعمیر کیا جانا ہے، 2001 میں تجویز دیئے جانے کے باوجود اس ڈیم کی تعمیر نہ ہو سکی تھی جس کے بعد بحریہ ٹاوٴن نے اس پنجاب حکومت کو اس ڈیم کی تعمیر کی پیشکش کی تھی۔