چین نے ساتھ چھوڑ دیا، علامہ مسعود اظہر عالمی دہشت گرد قرار، جدوجہد کشمیر سے کوئی تعلق نہیں: اقوام متحدہ

ویب ڈیسک ۔ چین کی جانب سے تکینکی اعتراض واپس، اقوام متحدہ نے جیش محمد کے سربراہ علامہ مسعود اظہر کو عالمی دہشتگردوں کی فہرست میں شامل کر لیا۔ علامہ مسعود اظہر کا کشمیر میں ہونے والے واقعات سے کوئی تعلق نہیں، اقوام متحدہ میں پاکستانی موقف کی جیت ہو گئی۔

تفصیلات کے مطابق بھارت ، امریکہ اور فرانس کی جانب سے جیش محمد کے سربراہ علامہ مسعود اظہر کو دہشت گرد قرار دیئے جانے کی قرارداد اقوام متحدہ میں پیش کی گئی تھی۔ اس سے قبل بھی بھارت کی جانب سے تین مرتبہ یہ درخواست دی گئی تھی جسے پاکستان کے دوست ملک چین کی جانب سے تکینکی بنیادوں کی وجہ ویٹو کر دیا جاتا تھا۔ تاہم اس مرتبہ چین کا تکینکی اعتراض دور ہوجانے کے باعث بھارت علامہ مسعود اظہر کو عالمی دہشت گردوں کی فہرست میں شامل کروانے میں کامیاب ہو گیا۔

دوسری جانب پاکستان کے ترجمان وزارت خارجہ ڈاکٹر فیصل نے پریس کانفرنس میں بتایا کہ اقوام متحدہ 1267 کمیٹی نے مولانا مسعود اظہر کو اقوام متحدہ کی پابندیوں کی فہرست میں شامل کر لیا ہے۔

انہوں نے وضاحت کی پاکستان کا اعتراض تھا کہ مسعود اظہر کا پلوامہ وکشمیری جدوجہد سے تعلق جوڑنا غلط ہے، بھارت نے تاحال مسعود اظہر کے پلوامہ حملے میں ملوث ہونے سے متعلق ثبوت نہیں دیئے، جس پر یواین کمیٹی میں پلوامہ حملے اور کشمیری حق خود ارادیت سے مسعود اظہر کا تعلق الگ کرنے کا پاکستانی مؤقف مان لیا گیا ہے

۔ان کا کہنا تھا کہ پابندیوں کے باعث اب مسعود اظہر کے اثاثے منجمد، سفری پابندی اور انہیں اسلحے کی خرید و فروخت پر پابندی کا سامنا ہوگا۔ پاکستان ان پابندیوں کا فوری طور پر اطلاق کرے گا۔