خواجہ سعد رفیق تیار، ن لیگ میں بغاوت کا علم اٹھا لیا

ویب ڈیسک – مسلم لیگ ن میں کی گئی حالیہ تبدیلیوں نے ن لیگ کے کئی پرانے کارکنوں اور رہنماوٴں کو بدظن کر دیا ہے اور اب بغاوت پر اتر آئے ہیں۔ ن لیگ میں شریف خاندان کے بعد اگر کسی نے سب سے زیادہ مشکلات جھیلی ہیں تو وہ ہیں خواجہ خاندان تاہم اب خواجہ سعد رفیق پارٹی کی جانب سے مسلسل نظر انداز کئے جانے کے بعد شدید غصے میں ہیں اور کسی بھی وقت بغاوت کا علم بلند کر سکتے ہیں۔

سینئر تجزیہ کار محمد علی درانی نے نجی ٹی وی چینل پر گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ خواجہ سعد رفیق آج کل اپنی پارٹی قیادت سے ناراض نظر آتے ہیں۔اس کی ایک وجہ تو یہ ہے کہ جب وہ حکومت میں تھے تب انہیں وفاقی وزیر ریلوے بنایا گیا تھا لیکن جب ن لیگ زیرعتاب آئی تو مختلف پارٹی کارکنوں کو بڑی وزارتوں پر بٹھایا گیا  اورخواجہ سعد رفیق کو باوجود کوشش کے وزارت ریلوے کے علاوہ اور کوئی عہدہ نہ دیا گیا۔

اب جب وہ مختلف مقدمات میں جیل میں ہیں اور ن لیگ نے کچن کیبنٹ کے تحت پارٹی عہدوں کا فیصلہ کیا تواس میں بھی خواجہ سعد رفیق کو یکسر نظرانداز کیا گیا ہے جس پر وہ اپنی قیادت سے نالاں ہیں۔ سینئر تجزی کا کہنا تھا کہ ذرائع کے مطاق اب خواجہ سعد رفیق ہوا کا رخ پلٹنے کا انتظار کر رہے ہیں۔ایک تو وہ اس بات کا انتظار کر رہے ہیں کہ آج شام کو سابق وزیراعظم نواز شریف کو جیل چھوڑنے والے جلوس میں کس قدر لوگ آئیں گے اور دوسراوہ پارٹی کے اندر پارٹی بنانے کا منصوبہ بھی بنا رہے ہیں۔

یاد رہے کہ گزشتہ ہفتے مسلم لیگ ن میں بڑے پیمانے پر تبدیلیاں کی گئیں تھیں جس میں کئی نو وارد لوگوں کو پارٹی میں بڑے بڑے عہدوں سے نوازا گیا تھا جبکہ خواجہ  خاندان کو تمام تت قربانیوں کے باوجود بالکل نظر انداز کر دیا گیا تھا۔