شوکت خانم کیلئے عطیات کے سارے ریکارڈ ٹوٹ گئے، اتنی بڑی رقم کہ عمران خان شکریہ ادا کرنے پر مجبور ہو گئے

ویب ڈیسک ۔ گزشتہ دو دہائیوں سے وزیراعظم عمران خان اپنے بنائے ہوئے ملک کے واحد کینسر ریسرچ ہسپتال کے لئے عطیات اکٹھے کرتے آرہے ہیں، خاص طور پر ہر رمضان میں ایک افطار ڈنر منعقد کیا جاتا ہے جس میں مخیر حضرات دل کھول کر کینسر ہسپتال کے لئے عطیات دیتے ہیں۔ اور ہر سال ان عطیات میں اضافہ ہوتا جا رہا ہے۔

گزشتہ روز بھی لاہور میں شوکت خانم کینسر ہسپتال کے لئے ایک فنڈ ریزینگ افطار ڈنر منعقد کیا گیا جس میں اس بار ریکارڈ عطیات اکٹھے ہوئے۔ اکٹھے ہونے والے عطیات کی مالیت 20 کروڑ روپے ہے۔ وزیراعظم عمران خان نے اتنی بڑی رقم ایک ڈنر پر اکٹھی ہونے پر پاکستانی عوام کا خصوصی طور پر شکریہ اداکیا۔

وزیراعظم عمران خان نے اپنے تشکرانہ پیغام کو ٹویٹر پر شئیر کرتے ہوئے کہا کہ میں شوکت خانم کے خیراتی افطار میں آج رات 20 کروڑ روپے بطور عطیات دیکر پچھلے تمام ریکارڈ توڑنے والے ڈونرز کا تہہ دل سے شکریہ ادا کرنا چاہتا ہوں۔ زکوٰۃ کی مد میں اکٹھی ہونے والی رقم صرف اور صرف سرطان (کینسر) میں مبتلا مریضوں کے مفت علاج پر خرچ کی جاتی ہے۔

 

یاد رہے کہ شوکت خانم کینسر ریسرچ ہسپتال ملک کا واحد کینسر ہسپتال ہے جہاں ۔  1994 سے  کینسر کے 70 فیصد مریضوں کا مفت علاج کیا جاتا ہے۔ لاہور کے بعد شوکت خانم ہسپتال اب پشاور میں بھی آپریشنل ہے جبکہ شوکت خانم کراچی بھی تکمیل کے مراحل میں ہے۔