پاکستان اور آئی ایم ایف کے درمیان 6 ارب ڈالر کا معاہدہ طے پا گیا

ویب ڈیسک ۔ طویل مذاکرات اور کبھی ہاں کبھی نا کے بعد بالاخر پاکستان اور آئی ایم کے درمیان معاہدہ طے پا ہی گیا۔ معاہدے کے تحت پاکستان کو اگلے 3سالوں میں 6 ارب ڈالر ملیں گے۔ بدلے میں پاکستان کو آئی ایم ایف کی کڑی شرائط ماننا پڑیں گی۔

تفصیلات کے مطابق مشیر خزانہ ڈاکٹر حفیظ شیخ نے اعلان کیا ہے کہ انٹرنیشنل مانیٹری فنڈ (آئی ایم ایف) اور پاکستان کے درمیان مذاکرات کامیاب ہو گئے ہیں اور اب پاکستان کو آئندہ تین  سالوں میں آئی ایم ایف سے  6 ارب ڈالر کا پیکج ملے گا۔

سرکاری ٹیلی وژن سے گفتگو میں مشیر خزانہ عبدالحفیظ شیخ کا کہنا تھا کہ آئی ایم ایف جو کہہ رہا ہے، ان میں کچھ چیزیں ہمارے حق میں بھی ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ آئی ایم ایف کا بورڈ اب معاہدے کی حتمی منظوری دے گا۔ آئی ایم ایف پاکستان کو 6 ارب ڈالر دے گا۔

حفیظ شیخ کا کہنا تھا کہ پاکستان نے آئی ایم ایف کو یقین دہانی کرائی ہے کہ اسٹیٹ بینک کو خومختار رکھا جائے گا۔ عالمی بینک اور ایشیائی ترقیاتی بینک سے بھی 2 سے 3  ارب ڈالر مل سکتے ہیں اور پاکستان کو کم شرح سود پر قرض ملے گا۔

یاد رہے کہ پاکستان اور آئی ایم ایف کے درمیان طویل عرصے سے مذاکرات جاری تھے جن میں اکثر ڈیڈلاک بھی آیا۔ وزیراعظم عمران خان وزارت عظمیٰ کا عہدہ سنبھالنے کے بعد سے اس کوشش میں تھے کہ کسی طرح آئی ایم ایف سے بچا جا سکتے لیکن ان کی تمام تر کوششوں کے باوجود پاکستان کو گرتی معیشت کو سہارا دینے کے لئے آئی ایم ایف کا دروازہ ہی کھٹکھٹانا پڑا۔