وہی ہوا جس کا ڈر تھا، الیکشن جیتتے ہی بی جے پی نے اوقات دکھا دی، ورلڈکپ میں پاکستان کیساتھ کھیلنے سے انکار کر دیا

ویب ڈیسک ۔ کم ظرف مودی سرکار الیکشن جیتتے ہی اپنی اوقات پر واپس آگئی، ابھی چند گھنٹے ہوئے جیت کو اور بھارت نے ورلڈکپ 2019 میں پاکستان کے ساتھ میچ کھیلنے سے انکار کر دیا، انگلینڈر میں موجود بھارتی کھلاڑیوں کو پیغام پہنچا دیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق سابق بھارتی کرکٹر اور بی جے پی کے رہنما گوتم گمبھیر نے الکیشن جیتتے ہی میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ بھارت پاکستان کے ساتھ ورلڈ کپ میں شیڈول میچ نہیں کھیلے گا اور اس کے لئے بھارتی کھلاڑیوں کو میچ سے دستبردار ہونے کے لئے تیار رہنا چاہیئے۔

ان کا کہنا تھا کہ اگر پاکستان اور بھارت ورلڈکپ فائنل میں بھی آجاتے ہیں تو بھارت کو میچ چھوڑ دینا چاہیئے۔ گوتم گمبھیر نے کہا پلوامہ حملے میں ہلاک ہونے والے جوانوں کی زندگیاں کرکٹ کے 2 پوائنٹس سے زیادہ اہم ہیں ۔ بھارتی ٹیم اور قوم کو پاکستان کے ساتھ میچ کے بائیکاٹ کے لئے تیار رہنا چاہیئے۔

اس سے قبل انگلینڈ میں موجود بھارتی کپتان ویرات کوہلی نے بھی پاک بھارت میچ کے حوالے سے گیند اپنی حکومت کے کورٹ میں پھینک دی تھی۔ برطانیہ میں میڈیا کانفرنس کے دوران بات کرتے ہوئے کوہلی کا کہنا تھا کہ  پاکستان کے ساتھ میچ کھیلنے یا نہ کھیلنے کے فیصلے کا اختیار میرے پاس نہیں ہے۔ اس لیے نہیں بتا سکتا کہ میچ ہو پائے گا یا نہیں۔ لیکن اگر میچ ہوا تو ہم پاکستان کے خلاف زیادہ دباوٴ نہیں لیں گے۔

 

یاد رہے کہ بھارت نے ایک طویل عرصے سے پاکستان کے خلاف کوئی دوملکی سیریز نہیں کھیلی اور اس کی وجہ بھارتی حکومت کی ہٹ دھرمی ہے جو کھیل میں بھی سیاست کو لے آئی ہے۔ پاک بھارت کرکٹ شائقین کو اب دنوں ممالک کے بیچ ہونے والے کانٹے دار مقابلے صرف آئی سی سی کے ایونٹس میں ہی دیکھنے کو ملتے ہیں  اور اب نو منتخب بھارتی حکومت کے رویے نے آئی سی سی ایونٹس میں بھی پاک بھارت مقابلوں پر سوالیہ نشان لگا دیاہے۔