کرکٹ کے زوال کی انتہا،پاکستان کو افغانستان کے ہاتھوں ذلت آمیز شکست، قومی ٹیم کی مسلسل 11ویں ہار

ویب ڈیسک ۔ پاکستان کرکٹ اپنے بدترین دور سے گزر رہی ہے، کرکٹ ورلڈکپ کے وارم اپ میچ میں افغانستان نے بھی پاکستان کو 3 وکٹوں سے شکست دےدی۔ بنا فٹنس ٹیسٹ پاس کئے ورلڈ کپ کی ٹکٹ لینے والے لاڈلے محمد عامر کی خانہ پوری باوٴلنگ نے پاکستان کی شکست پر مہر ثبت کی۔ قومی ٹیم کو مسلسل 11ویں شکست کا سامنا کرنا پڑا۔

تفصیلات کے مطابق انگلینڈ کے شہر برسٹل میں کھیلے گئے وارم اپ میچ میں افغانستان کی نومولود ٹیم نے پاکستان کو تین وکٹوں سے شکست دے کر ٹورنامنٹ میں اپنی دھاک بٹھا دی۔  آج پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے پاکستان کی پوری ٹیم صرف 262 رنز بنا کر آوٴٹ ہوگئی، قومی ٹیم پورے پچاس اوور بھی نہ کھیل پائی اور 48ویں اوور میں ہی ہمت ہار گئی۔

پاکستان کی جانب سے ایک بار پھر بابر اعظم نے عمدہ بیٹنگ کی اور سنچری سکور کی انہوں نے 112رنز بنائے۔ جبکہ دیگر بلے بازوں میں امام الحق 32، فخرزمان 19، حارث سہیل 1، محمد حفیظ 12 ، شعیب ملک 44، سرفراز احمد 13، عماد وسیم 18، حسن علی 6 اور شاداب خان ایک رنز بناکر آؤٹ ہوئے۔

ہدف کے تعاقب میں افغان بلے بازوں نے دھواں دار بیٹنگ کی اور پاکستانی باوٴلروں کو تگنی کا ناچ نچوا دیا۔ نام نہاد دنیا کی بہترین باوٴلنگ لائن افغان بلے بازوں کے سامنے بے بس نظر آئی۔

افغانستان کی جانب سے محمد شہزاد اور حضرت اللہ نے اوپننگ کی، شہزاد نے 25 گیندوں پر 23 رنز بنائے اور ریٹائرڈ ہرٹ ہوگئے جب کہ حضرت اللہ 28 بالز پر 49 رنز بنائے، انہوں نے شاہین شاہ آفریدی کو ایک ہی اوور میں 5 چوکے جڑے۔ شاداب خان کی بال پر شعیب ملک نے انہیں کیچ آؤٹ کیا۔

دیگر بلے بازوں میں رحمت شاہ نے 49 گیندوں پر 32 رنز، سمیع اللہ شنواری نے 22، اصغر افغان نے 7، محمد نبی نے 34، گلبدین نائب نے دو رنز بنائے جب کہ نجیب اللہ نے ایک رنز بنایا۔ چوتھے نمبر پر آنے والے حشمت اللہ شاہدی نے میچ کی فتح میں کردار ادا کیا اور 102 بالز پر 74 رنز اسکور کرکے اپنی ٹیم کو فتح دلائی اور ناٹ آؤٹ رہے۔

پاکستان کرکٹ بورڈ کے لاڈلے محمد عامر جو بنا کوئی میچ کھیلے اور فٹنس ٹیسٹ پاس کئے قومی ٹیم میں جگہ بنانے میں کامیاب ہوگئے تھے میچ کے دوران بالکل غیر موثر نظر آئے۔ محمد عامر کی باوٴلنگ  صرف میچ کی خانہ پوری محسوس ہو رہی تھی۔ جبکہ وہاب ریاض نے اپنی سلیکشن کو صحیح ثابت کیا اور آخری اووروں میں اچھی باوٴلنگ کی لیکن وہ بھی پاکستان کو ذلت آمیز شکست سے نہ بچا سکے۔

افغانستان سے ہار کے بعد یہ پاکستان کی مسلسل گیارہویں میچ میں شکست ہے جو کرکٹ کی تاریخ کا بدترین ریکارڈ ہے۔ پاکستان کی اس ہار نے قومی ٹیم کی ورلڈ کپ تیاریوں کی قلعی کھول کر رکھ دی ہے۔