چار چار دن ایکسرے کیلئے پھرتے ہیں کوئی نہیں سنتا، اسمبلی میں اچھی اچھی تقریریں کرنے واے بلاول سائل کا مسئلہ سنتے ہی فرار

ویب ڈیسک ۔ چئیرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو زرداری جب اسمبلی میں تقریر کرتے ہوئے عوام مسائل پر بحث کرتے ہیں تو پاکستان کا میڈیا اور بھٹو کے چاہنے والے واہ واہ کئے بغیر نہیں رہ پاتے۔ پیپلزپارٹی اور بلاول بھٹو کا یہ بھی دعویٰ ہے کہ سندھ میں علاج معالجے کی سہولتیں پاکستان میں سب سے بہترین ہیں۔ خورشید شاہ نے تو یہاں تک کہہ دیا تھا کہ کسی نے ترقی دیکھنی ہو تو سندھ آکر دیکھے۔

لیکن حقیقت ان سب باتوں کے برعکس ہے۔ لاڑکانہ جو کہ بھٹو خاندان کا گڑھ سمجھا جاتا ہے اب ایڈز کا گڑھ بنتا جا رہا ہے۔ چئیرمین بلاول بھٹو آج رتو ڈیرو گئے اور وہاں بھی جب حکومت کے خلاف بات کی تو بہت ہی اچھی اچھی باتیں کیں لیکن جب عوام کے مسئال سننے کی باری آئی تو محترم بلاول بھٹو صاحب سے سچ سنا نہ گیا اور انہوں ن بھاگنے میں ہی عافیت جانی۔

تفصیلات کے مطابق رتو ڈیرو میں بلاول بھٹو نے آج عوامی مسائل سننے کی ٹھانی، ایک شخص نے بلاول بھٹو کو اپنا مسئلہ سناتے ہوئے کہا کہ وہ چار چار دن ایکسرے کروانے کے لئے پھرتے ہیں لیکن ایک ایکسرے نہیں ہو پاتا، علاج کی سہولیات بدتر ہیں، وہ شخص اپنا مسئلہ ابھی پورا بھی سنا نا پایا تھا کہ بلاول بھٹو وہاں سے اٹھ کر چلے گئے اور یوں سندھ کا ایک باسی اپنے لیڈر کو جاتا دیکھ کر اپنا سا منہ لے کر رہ گیا۔