آصف علی زرداری کی بے نامی جائیدادیں ضبط

ویب ڈیسک – حکومت نے سابق صدر آصف علی زرداری کی 8 بے نامی جائیدادیں اور شئیرز ضبط کر لئے۔ وزیراعظم عمران خان کے معاون خصوصی نعیم الحق نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر سابق صدر ضبط شدہ بے نامی جائیدادوں کی تفصیل شئیر کر دی۔

تفصیلات کے مطابق  حکومت کی جانب سے ایمنسٹی سکیم کے تحت بے نامی جائیدادوں اور بنک اکاوٴنٹس ظاہر کرنے کی مدت دوسری مرتبہ توسیع کے بعد گزشتہ رات 12 بجے ختم ہوگئی۔ جس کے بعد ایف بی آر نے ایکشن لیتے ہوئے بے نامی جائیدادوں کو ضبط کرنا شروع کر دیا ہے۔ آج سابق صدر کی آٹھ بے نامی جائیدادوں کو ضبط کیا گیا جن میں پلاٹ نمبر 126 ای ون ، پلاٹ نمبر 122 کلفٹن کراچی، آصف زرداری کے بے نامی نجی بینک کے 30،30 ملین کے شئیرز  اور بے نامی پلاٹ نمبر 18-2 سول لائنز کراچی بھی ضبط کر لیا گیا ہے۔ نعیم الحق نے اپنے ٹویٹ میں یہ بھی بتایا کہ سابق صدر کے ٹھٹھہ سیمنٹ کمپنی کے شئیرز بھی ضبط کرلیے گئے ہیں۔

 

یاد رہے کہ وزیراعظم عمران خان نے گزشتہ ماہ ایک ایمنسٹی سکیم شروع کی تھی جس کے تحت بلیک منی کو وائٹ کیا جا سکتا تھا۔ اور کوئی بھی شخص اپنی بے نام جائیداد اور بنک اکاوٴنٹس کو ظاہر کر کے قانونی بنا سکتا تھا۔ وزیراعظم نے بے نامی جائیدادیں رکھنے والوں کو 30 جون تک کی مہلت دی تھی جسے بعد میں بڑھا کر 3 جولائی تک مہلت دے دی گئی تھی۔ وزیراعظم عمران خان کی ایمنسٹی سکیم سے ریکارڑ 1 لاکھ 27 ہزار لوگوں نے فائدہ اٹھایا ہے۔