سسیلین مافیا کی طرح ‘پاکستانی مافیا’ عدالتوں ڈرا دھمکا کر اپنی ناجائز دولت بچانے کی کوشش کر رہا ہے: وزیراعظم عمران خان

ویب ڈیسک ۔ احتساب عدالت کے جج ارشد ملک کی جانب سے عدالت میں جمع کروائے گئے بیان حلفی میں کہا گیا ہے کہ انہیں نوازشریف کے حق میں فیصلہ دینے کے لئے 50کروڑ روپے رشوت کی آفر کی گئی جبکہ گاہے بگاہے انہیں دھمکیاں بھی دی جاتی رہیں۔ ارشد ملک کے بیان حلفی پر وزیراعظم عمران خان نے رد عمل دیتے ہوئے کہا ہے کہ پاکستانی مافیا اپنے کرپشن کی دولت بچانے کے لئے عدلیہ پر اثر انداز ہو نا چاہ رہا ہے۔

تفصیلات کے مطابق سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر وزیراعظم عمران خان نے ایک ٹویٹ شئیر کیا جس میں انہوں نے اٹلی کے سابق ھکمران کی جانب سے اطالوی عدلیہ پر اثر انداز ہونے کی کوشش کی خبر شئیر کی اور ساتھ ہی لکھا کہ ’’ سسلین مافیا کی طرح پاکستانی مافیا بھی عدالتوں پر اثر انداز ہونے کے لئے رشوت، دھمکیاں اور بلیک میلنگ جیسے  حربے استعمال کر رہا ہے۔  تا کہ یہ لوگ اپنی بیرون ملک پڑی ہوئی منی لانڈرنگ کی رقم کو بچا سکیں۔

یاد رہے کہ احتساب عدالت کے جج ارشد ملک کی ویڈیو آنے کے بعد وزیراعظم عمران خان نے اس سارے معاملے سے الگ رہنے کا اعلان کرتے ہوئے کہا تھا کہ اعلیٰ عدلیہ خود اس معاملے کو دیکھے۔