بھارت کا وادی نیلم میں خطرناک کلسٹر بموں سے حملہ، عالمی قوانین کی دھجیاں اڑا دیں

ویب ڈیسک ۔ جنگی جنون میں مبتلا بھارت نے آزاد کشمیر میں واقع وادی نیلم پر خطرناک اور ممنوعہ کلسٹر بموں سے حملہ کیا۔ کلسٹر بموں کے حملے میں ایک بچے سمیت 3 افراد شہید ہوئے۔ کلسٹر بموں کا استعمال عالمی سطح پر ممنوع ہے اور انسانی آبادی پر اس کا استعمال انسانی حقوق اور جینیوا کنونشن کی صریحاً خلاف ورزی ہے۔

تفصیلات کے مطابق پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ آئی ایس پی آر نے کہا ہے کہ  بھارتی فوج لائن آف کنٹرولپر شہری آبادی کو کلسٹر بموں سے نشانہ بنارہی ہے، بھارتی فوج نے 30 اور 31 جولائی کو آزاد کشمیر کی وادی نیلم میں کلسٹر ایمونیشن کا استعمال کیا جس کے باعث 4 سالہ بچے سمیت 3 افراد شہید اور 11 شدید زخمی ہوگئے۔ بھارتی فوج کی ایل او سی پر بلااشتعال فائرنگ اور ممنوعہ ہتھیاروں کا استعمال جنیوا کنونشن اور بین الاقوامی انسانی قانون کی خلاف ورزی ہے۔

آئی ایس پی آر کے مطابق رواں سال بھارت نے اب تک 1824 بار جنگ بندی معاہدے کی خلاف ورزی کی جس سے 16 افراد شہید 105 زخمی ہو چکے ہیں۔یاد رہے کہکلسٹر بموں کا استعمال عالمی سطح پر ممنوع ہے اور انسانی آبادی پر اس کا استعمال انسانی حقوق اور جینیوا کنونشن کی صریحاً خلاف ورزی ہے۔