بھارت کی جانب سے کسی بھی جارحیت کا منہ توڑ جواب دیا جائے گا: پاکستان

ویب ڈیسک ۔ بھارت کی جانب سے آزاد کشمیر میں کلسٹر بموں سے حملے بعد آج وزیراعظم پاکستان عمران خان کی زیر صدارت قومی سلامتی کمیٹی کا ہنگامی اجلاس ہوا۔ جس میں بھارت کی جانب سے عالمی قوانین کی خلاف ورزی کے بعد پیدا ہونے والی صورتحال اور کسی بھی بھارتی جارحیت کی صورت میں پیدا ہونے والی صورتحال پر غور کیا گیا۔

اس اہم اجلاس میں وزیراعظم عمران خان، وزیر دفاع پرویز خٹک،وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی، وزیردفاع پرویز خٹک، وزیر داخلہ اعجاز شاہ، آرمی چیف جنرل قمر جاوید باوجوہ، ڈی جی آئی ایس آئی،  ایئرچیف، نیول چیف نے بھی شرکت کی۔ اجلاس میں بھارت کی جانب سے شہری آبادی کو کلسٹر بموں سے نشانہ بنانے کی شدید مذمت کی گئی اور اس معاملے کو علامی سطح پر اٹھاتے ہوئے بھارتی مکروہ چہرہ بے نقاب کرنے پر اتفاق کیا گیا۔

اجلاس میں یہ فیصلہ کیا گیا ہے کہ بھارت کی جانب سے کسی بھی قسم کی جارحیت کا بھرپور اور منہ توڑ جواب دیا جائے گا۔ بھارت جس زبان میں بات کرے گا اسی کی زبان میں جواب ملے گا۔   پاکستان کشمیریوں کی اخلاقی اور سفارتی حمایت جاری رکھے گا جب کہ  پاکستان کشمیر کا حل اقوام متحدہ کی قراردادوں کے زریعے چاہتا ہے۔