مودی سرکار کا وار، کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم، بھارت نے مقبوضہ وادی کو دو حصوں میں تقسیم کر دیا

ویب ڈیسک ۔ بھارت نے مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کرتے ہوئے اسے بھارتی حصہ قرار دے دیا۔ بھارتی صدر نے مودی سرکار کے حکم نامے پر دستخظ کرتے دیئے۔ آرٹیکل  35 اے ختم کرتے ہوئے مقبوضہ وادی دو حصوں میں تقسیم کر دی گئی۔

تفصیلات کے مطابق بھارتی صدر نے ایک خصوصی حکم نامہ جاری کرتے ہوئے بھارتی آئین کی شق نمبر   35اے کو ختم کر دیا جس سے مقبوضہ کشمیر کو حاصل خصوصی حیثیت ختم ہو گئی۔ مقبوضہ جموں و کشمیر کو اب بھارت کا حصہ قرار دے دیا گیا ہے۔  مقبوضہ وادی کو 2 حصوں میں بھی تقسیم کرتے ہوئے وادی جموں و کشمیر کو لداخ سے الگ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

نئے بھارتی قانون کے مطابق  مقبوضہ کشمیر آج سے بھارتی یونین کا حصہ تصور ہو گا۔ یہ قدم اسرائیلی طرز پر کشمیریوں کو اقلیت میں بدلنے کیلئے اٹھایا گیا ہے۔بھارتی آئین کی جو دفعات و قوانین دیگر ریاستوں پر لاگو ہوتے ہیں وہ اس دفعہ کے تحت ریاست جموں کشمیر پر نافذ نہیں کیے جا سکتے۔ بھارتی آئین کے آرٹیکل 370 کے تحت کسی بھی دوسری ریاست کا شہری جموں کشمیر کا شہری نہیں بن سکتا اور نا ہی وادی میں جگہ خرید سکتا ہے۔

بھارت اب کشمیر میں اسرائیل طرز پر غیر کشمیریوں اور غیر مسلموں کو آباد کرنے کا ارادہ رکھتا ہے۔ اس کے ساتھ اقوام متحدہ میں کشمیر بارے جمع کروائی گئیں تمام تحریک بھی دم توڑ سکتی ہیں۔