بھارت سن لے ہم ٹیپو سلطان کی طرح خون کے آخری قطرے تک لڑیں گے: عمران خان

اسلام آباد ۔ بھارت کی جانب سے مقبوضہ کشمیر کا خصوصی درجہ ختم کرنے کے بعد پیدا ہونے والی صورتحال پر غور کرنے کے لئے آج قومی اسمبلی کا مشترکہ اجلاس ہوا۔ اجلاس سے وزیراعظم عمران خان نے خطاب کرتے ہوئے بھارت کو انتباہ کیا ہے کہ وہ کشمیر بارے اپنا فیصلہ واپس لے اور اگر اس نے پاکستان پر جنگ مسلط کرنے کی کوشش کی تو بھارت یاد رکھے کہ ہمارا ہیرو بہادر شاہ ظفر نہیں ٹیپو سلطان ہے اور ہم اپنے خون کے آخری قطرے تک لڑیں گے۔

تفصیلات کے مطابق پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ بھارت میں اس وقت ایک انتہا پسند حکومت ہے جو مسلمانوں کا وجود برداشت نہیں کرتی۔ انہوں نے کہا کہ بھارتی حکومت جس ایجنڈے پر عمل کر رہی ہے وہ ان کے آباوٴ اجداد کا ایجنڈا ہو جو مسلمانوں کو اپنا محکوم بنا کر رکھنا چاہتی ہے۔ قائداعظم نے اسی ہندووانہ سوچ کو بھانپتے ہوئے دو قومی نظریہ پیش کیا تھا۔

عمران خان نے کہا کہ بھارت کشمیر کی جدوجہد آزادی کو جتنا دبانے کی کوشش کرے گا وہ اتنا ابھرکے آئے گی اور مجھے خطرہ ہے کہ پلوامہ جیسا ایک اور حملہ ہو گا اور اس کا الزام بھارت پاکستان پر لگائے گا۔ انہوں نے کہا کہ اگر بھارت نے ہم جنگ مسلط کرنے کی کوشش کی تو میں بھارت سمیت پوری دنیا کو بتا دینا چاہتا ہوں کہ یہ آخری جنگ ہو گی جس کو فاتح کوئی نہیں ہو گا اور پوری دنیا اس کے لپیٹ میں آجائے گی۔

وزیراعظم نے کہا کہ میں بھارت کو بتا دینا چاہتا ہوں کہ اس قوم کا ہیرو بہادر شاہ ظفر نہیں جس نے ہتھیار ڈال دیئے تھے اس قوم کا ہیرو ٹیپو سلطان ہے اور ہم اپنے خون کے آخری قطرے تک لڑیں گے۔ عمران خان نے عالمی براداری سے اپیل کی ہے کہ وہ کشمیر میں بھارتی اقدامات کا نوٹس لے یہ وہی اقدامات ہیں جو ہٹلر نے یہودیوں کے خلاف لئے اور دنیا آج تک اس پر پچھتا رہی ہے۔