خاتون اینکر کی غیر اخلاقی تصاویر انٹرنیٹ پر اپ لوڈ کرنے کا الزام، ایف آئی اے کا نجی ٹی وی چینل پر چھاپہ

ویب ڈیسک ۔ ایک نجی ٹی وی چینل سندھ ٹی وی کی خاتون ٹی وی اینکر نے اپنے ساتھی اینکر ارشاد جاگیرانی پر الزام عائد کیا ہے کہ انہوں نے ان کی  غیر اخلاقی تصاویر انٹرنینٹ پر اپ لوڈ کرنے کی دھمکی دیتے ہوئے بلیک میل کرنے کی کوشش کی، جس کے بعد ایف آئی اے سائبر کرائم سیل نے سندھ ٹی وی کے دفتر پر چھاپہ مارتے ہوئے ارشاد جاگیرانی کو گرفتار کر لیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق خاتون اینکر نے ایف آئی اے کو درخواست دی کہ ارشاد جاگیرانی نے ان کمپیوٹر ایڈیٹڈ عریاں تصاویر انٹرنینٹ پر اپ لوڈ کرنے کی دھمکی دی ہے اور انہیں کئی روز سے بلیک میل کیا جا رہا ہے۔ خاتون اینکر نے اپنی درخواست میں فیس بک اکاؤنٹ کا بھی حوالہ دیتے ہوئے بتایا کہ ملزم مختلف تقریبات کے موقع پر لی گئی ‘سیلفیز’ کو بنیاد بنا کر مختلف سوشل میڈیا آئی ڈیز کے ذریعے ہراساں اور بلیک میل کر رہا تھا۔

ایف آئی اے نے سائبر کرائم ایکٹ ک تحت کارروائی کرتے ہوئے خاتون اینکر کی درخواست پر ٹی وی اینکر ارشاد جاگیرانی کو گرفتار کر لیا ہے۔ دوسری جانب چینل انتظامیہ اور صحافی تنظیموں نے ایف آئی اے کے چینل آفس پر چھاپے کو غیر قانونی قرار دے دیا ہے۔